- الإعلانات -

پا کستا نی حکام سانحہ منیٰ کے شہداء کے جسد خاکی اور زخمیوں تک رسائی حاصل کرنے میں ناکام

سلام آباد: پاکستا نی حکام سانحہ منیٰ کے شہداء کے جسد خاکی اور زخمیوں تک رسائی حاصل کرنے میں ناکام ،وفاقی وزیر سمیت وزارت کے بیشتر اعلیٰ حکام زخمیوں کو سعودی عرب میں لاوارث چھوڑ کر واپس آ گئے. وزارت مذہبی امور کی ناقص کارکردگی کے باعث پا کستا نی حکام سانحہ منیٰ کے شہداء کے جسد خاکی اور زخمیوں تک رسائی حاصل کرنے میں ناکام ،وفاقی وزیر مذہبی امور سردار یوسف سمیت وزارت مذہبی امور کے بیشتر اعلیٰ حکام زخمیوں کو سعودی عرب میں لاوارث چھوڑ کر واپس آ گئے ہیں،ذرائع نے آن لائن کو بتایا کہ سعودی عرب میں تعینات ڈی جی حج ابو عاکف کے علاوہ کسی بھی پاکستانی حکام کو زخمیوں اور شہداء کے جسد خاکی تک رسائی حاصل نہیں اب تک سعودی عرب کے مختلف ہسپتالوں میں زخمی پاکستانیوں کی تعداد 300سے زائد ہے اور انکے گھروں میں صف ماتم بچھی ہوئی ہے اور وہ سمجھتے ہیں کہ سانحہ منی ٰ میں انکے پیارے بھی شہید ہو چکے ہیں حالانکہ سیکٹروں کی تعداد میں مریض سعودی عرب کے متعدد ہسپتالوں میں زیر علاج ہیں اور ان عازمین حجاج کی فہرستیں وزارت مذہبی امور کے پاس نہیں اور نہ ہی وزارت نے اپنی عوام کا کوئی درد محسوس کیا ذرائع کا مزیدکہنا تھاکہ جوائنٹ سیکرٹری حج ،سیکرٹری مذہبی امور اور وفاقی وزیر جو کہ مانیٹرنگ کمیٹی کے اہم رکن تھے اور وفاقی وزیر سردار یوسف نے سعودی عر ب سے بیان جاری کیا تھا کہ میں آخری زخمی کے صحت یاب ہونے تک سعودی عرب میں رہوں گا لیکن سعودی حکام کی جانب سے وفاقی وزیر سمیت پوری وزارت کو زخمیوں تک رسائی نہ دینے پر وفاقی وزیر افسردہ حال وطن واپس آگئے وفاقی وزیر کی ناقص کاکردگی پر جمعیت علماء اسلام(ف) نے وزیر اعظم ہاؤس کو وائٹ پیپر جاری کرنے کا بھی عندیہ دیا ہے انکے واپس آنے پر سعودی عرب میں موجود ڈی جی حج نے بھی تندی سے کام میں دلچسپی چھوڑ دی دوسری جانب وزیر اعظم ہاؤس بھی زخمیوں سے متعلق ابھی تک مکمل معلومات حاصل کرنے میں ناکام رہا ہے ۔