- الإعلانات -

بھارتی مشن کے فرسٹ سیکرٹری ابھیشیک سنگھ کی پاکستان کے خلاف ہرزہ سرائی .

نئی دہلی/ نیویارک :مسئلہ کشمیر کے حوالے سے پاکستان کے حوالہ جات مکمل طور پر سیاق وسباق سے ہٹ کر اور بھارت کے اندرونی معاملات میں واضح مداخلت ہیں،کشمیر بھارت کا لازمی حصہ تھا اور رہے گا،پاکستان کی جانب سے سرحدوں پر اشتعال انگیزیوں کے باعث بڑی تعداد میں شہریوں کا جانی نقصان ہورہا ہے ،بھارتی فورسز بھرپور جواب دے رہی ہے اقوام متحدہ میں بھارتی مشن کے فرسٹ سیکرٹری ابھیشیک سنگھ کی پاکستان کے خلاف ہرزہ سرائی .بھارت نے پاکستان کی جانب سے مسئلہ کشمیر کو اقوام متحدہ کی سطح پر اٹھانے کے اقدام کو سختی سے مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ مسئلہ کشمیر کے حوالے سے پاکستان کے حوالہ جات مکمل طور پر سیاق وسباق سے ہٹ کر اور بھارت کے اندرونی معاملات میں واضح مداخلت ہیں،کشمیر بھارت کا لازمی حصہ تھا اور رہے گا ۔بھارتی میڈیا کے مطابق اقوام متحدہ میں بھارتی مشن کے فرسٹ سیکرٹری ابھیشیک سنگھ کا کہنا ہے کہ پاکستان کو جواب دینے کا حق استعمال کرنے سے گریز کرنا چاہیے اور تجزیے کرنے کی بجائے ملک کو آگئے لے کر جانے کی سمت کے بارے میں سوچنا چاہیے۔اقوام متحدہ میں پاکستانی سفیر ملیحہ لودھی نے ادارے کے کام پر سیکرٹری جنرل کی رپورٹ کے حوالے سے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے اجلاس کے دوران مسئلہ کشمیر کو اٹھاتے ہوئے کہا تھا کہ کشمیری عوام تنازعہ کشمیر کا ایک لازمی حصہ ہیں مسئلے کے حل کیلئے انکی مشاورت ضروری ہے ۔بھارتی فرسٹ سیکرٹری کاکہنا تھاکہ کشمیر ہمیشہ سے بھارت کا حصہ ہے اور رہے گا۔اسطرح کی بات ایک ایسے ملک کی طرف سے کرنا بہت ستم ظریفی کی بات ہے جس نے ریاست جموں وکشمیر کے ایک حصے پر غیر قانونی قبضہ کررکھا ہے ۔مسئلہ کشمیر کے حوالے سے ملیحہ لودھی کے بیان کو مسترد کرتے ہوئے ابھیشیک سنگھ کا کہنا تھاکہ مسئلہ کشمیر کے حوالے سے پاکستان کے حوالہ جات مکمل طور پر سیاق وسباق سے ہٹ کر اور بھارت کے اندرونی معاملات میں واضح مداخلت ہیں۔انھوں نے الزام عائد کیا کہ پاکستان نے چند ہفتوں کے دوران لائن آف کنٹرول پر سیز فائر کی متعدد خلاف ورزیاں کی ہیں جس کے نتیجے بڑی تعدادمیں شہریوں کا جانی نقصان ہوا،بھارتی مسلح افواج اور نیم فوجی دستوں کی جانب سے ان اشتعال انگیزیوں کا بھرپور جواب دیا جارہا ہے ۔