- الإعلانات -

پاکستان بھارت کے ساتھ غیرمشروط بات چیت چاہتا ہے.قاضی خلیل اللہ

اسلام آباد:  ترجمان دفتر خارجہ قاضی خلیل اللہ کا کہنا ہے کہ پاکستان غیرمشروط بات چیت کرنا چاہتا ہے تاہم مذاکرات میں مسئلہ کشمیر کو شامل کیا جانا چاہیے۔ اسلام آباد میں ہفتہ وار بریفنگ کے دوران دفتر خارجہ کے ترجمان قاضی خلیل اللہ نے بتایا کہ وزیراعظم نواز شریف امریکی صدر براک اوباما کی دعوت پر منگل سے امریکا کا 4 روزہ سرکاری دورہ کریں گے جس میں وہ امریکی قیادت کو پاکستان کی اقتصادی پالیسیوں، دہشت گردی کے خلاف جنگ اور علاقائی صورتحال سے آگاہ کریں گے۔ ترجمان نے کہا کہ وزیراعظم امریکی رہنماؤں سے معیشت، تجارت، تعلیم، دفاع، انسداد دہشت گردی، صحت اور موسمیاتی تبدیلی کے شعبوں میں دوطرفہ تعاون پربھی تبادلہ خیال کریں گے۔ پاک بھارت مذاکرات کے حوالے سے ایک سوال کے جواب میں قاضی خلیل اللہ کا کہنا تھا کہ پاکستان غیرمشروط بات چیت کرنا چاہتا ہے تاہم مذاکرات میں مسئلہ کشمیر کو شامل کیا جانا چاہیے۔ دوسری جانب اقوام متحدہ میں پاکستان کی مستقل مندوب ڈاکٹر ملیحہ لودھی نے اقوام متحدہ کے اجلاس میں اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ خطے میں پائیدار امن کے لیے مسئلہ کشمیر کا حل ناگزیر ہے جب کہ مذاکراتی عمل پاکستان نے نہیں بلکہ بھارت نے منسوخ کیا۔ انہوں نے بھارت کے دلائل کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ جموں و کشمیر کا مسئلہ اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قرار دادوں کے مطابق حل کرنے کی ضرورت ہے تاکہ جنوبی ایشیا میں پائیدار امن و استحکام لایا جاسکے۔ انہوں نے مزید کہا کہ بھارت سمجھوتہ ایکسپریس میں بم دھماکوں کے منصوبہ سازوں کو انصاف کے کٹہرے میں لانے میں ناکام ہوگیا ہے۔