- الإعلانات -

ڈرون حملوں میں بے گناہ شہریوں کی ہلاکت90 فیصد ہے ‘ سابق ڈرون اپریٹرز

واشنگٹن: امریکی ڈرون اپریٹرز نے ڈرون حملوں میں90 فیصد بے گناہ شہریوں کے مارے جانے کا راز افشا کرتے ہوئے صدر اوباما کو ڈرون پروگرام پر نظر ثانی کی اپیل کردی ہے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق 4 سابق ڈرون اپریٹرز نے کہا کہ حکمران جھوٹ بولتے ہیں، خفیہ رپورٹس کے مطابق ڈرون حملوں میں مرنے والے 90 فیصد عام افراد، خواتین اور بچے ہوتے ہیں جب کہ ڈرون حملوں میں مرنے والے بچوں کو زیرتربیت دہشت گرد قرار دیا جاتا ہے۔ سابق ڈرون اپریٹرز نے کہا کہ پیرس حملوں کے بعد ان کا یقین پکا ہوگیا ہے کہ ڈرون حملے امریکا اور اتحادیوں کے خلاف نفرت میں اضافے اورداعش کے وجود کا سبب بن رہے ہیں، ڈرون حملوں کا نشانہ بننے والے افراد کے اہل خانہ انتقاماً انتہا پسند تنظیموں میں بھرتی ہوتے ہیں۔