- الإعلانات -

امریکہ میں مسلمان ہونا ایک جرم بن گیا،مسلم خاتون کو جہاز سے اتار دیا گیا

مسلمان سیاہ فام اور امریکی ہونا میرے جرم ہیں، 200 مسافروں کی موجودگی میں جہاز سے اترنے کا حکم دینا انتہائی شرمناک تھا، مسلمان ہونے کے سبب امتیازی سلوک کیا گیا کیونکہ امریکی اس کی طاقت رکھتے ہیں،مسلمان خاتون کمیلہ رشید
نیو یارک:مسلمان ہونا ایک جرم بن گیا،امریکہ میں مقیم 30 سالہ سیاہ فام مسلمان خاتون کمیلہ رشید کو نیو یارک سے استنبول جانے والی پرواز سے اتار لیا گیا ، کئی گھنٹوں تک تفتیش کے بعد بھی جہاز پر سوار نہ ہونے دیا گیا۔غیر ملکی میڈیا کے مطابق 30 سالہ سیاہ فام مسلمان خاتون کمیلہ رشید کو نیو یارک سے استنبول جانے والی پرواز سے اتار لیا گیا ، کئی گھنٹوں تک تفتیش کے بعد بھی جہاز پر سوار نہ ہونے دیا گیا۔ کمیلہ رشید کا کہنا ہے کہ 200 مسافروں کی موجودگی میں جہاز سے اترنے کا حکم دینا انتہائی شرمناک تھا، مسلمان ہونے کے سبب امتیازی سلوک کیا گیا کیونکہ امریکی اس کی طاقت رکھتے ہیں۔خاتون سے مسلسل کئی گھنٹوں کی تفتیش میں بے مقصد سوالات کی بھرمار کے بعد بھی پرواز میں شریک ہونے کی اجازت نہیں دی گئی۔ خاتون کا کہنا ہے کہ مسلمان سیاہ فام اور امریکی ہونا میرے جرم ہیں۔