- الإعلانات -

دہشتگردی کیخلاف جنگ میں 80فیصد کریڈٹ راحیل شریف کو جاتا ہے ، وائس چیئرمین سیکورٹی اینڈ ڈیفنس یورپی پارلیمنٹ افضل خان

روز نیوز کے پروگرام ’’سچی بات ‘‘میں ایس کے نیازی کے ساتھ خصوصی گفتگو
اسلام آباد(نیوز رپورٹ)ہمارا دل پاکستان کیلئے دھڑکتا ہے ،ملک سے دوری ملک کے ساتھ کشش پیدا کردیتی ہے ،یورپی پارلیمنٹ میں رہ کر پاکستان کی خدمت کرتے ہیں ،دنیا میں کوئی جگہ محفوظ نہیں ہے،دنیا کے امن کیلئے پاکستان نے سب سے زیادہ قربانیاں دیں ،پاکستان کو صحیح معنوں میں دہشتگردی کیخلاف خراج تحسین پیش نہیں کیا گیا،ہم نے پارلیمنٹ میں پاکستان کیساتھ ہونے کی قرارداد بھی منظورکروائی ،ہمیں گلوبل لیول پر تعاون کی ضرورت ہے ۔امریکہ چودہ سال سے دہشتگردی کیخلاف جنگ میں مقابلہ کرنے میں ناکام ہے،ہماری فوج نے صرف دو سال میں حالات بدل دئیے ہیں۔ان خیالات کا اظہار وائس چیئرمین سیکورٹی اینڈ ڈیفنس یورپی پارلیمنٹ افضل خان نے پروگرام ’’سچی بات ‘‘میں ایس کے نیازی کے ساتھ خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے کہاداعش کا معاملہ پیچیدہ ہے،داعش کے معاملے پر ہر ملک کا اپنا مفاد ہے،اقوام متحدہ کے دانت اپنے نہیں ہیں ،اقوام متحدہ کو دانت ادھار لینے پڑتے ہیں ،اقوام متحدہ میں اصلاحات کی ضرورت ہے ،حاکمیت اورمفاد سے اقوام متحدہ کو پاک کرنا چاہیے ۔فلسطین کیلئے سب سے زیادہ امداد یورپی یونین دیتی ہے ،ہم نے کشمیر ویک شروع کیا ہے ،ہم یورپی پارلیمنٹ کے اندر کشمیر کی آواز اٹھانے کیلئے کوشاں ہیں،یورپ میں دہشتگردی کی تپش محسوس کی جارہی ہے ۔آگ جب گھر کے پاس ہو تو تپش محسوس ہوتی ہے ،پاکستانی،کشمیری یورپ میں بہت زیادہ ہیں ۔پاکستان کے اندرونی مسائل زیادہ ہیں ،برطانیہ کے پاکستانیوں میں راحیل شریف بہت مقبول ہیں ۔دہشتگردی کیخلاف جنگ میں 80فیصد کریڈٹ راحیل شریف کو جاتا ہے ،دہشتگردی کیخلاف جنگ میں 20فیصد کریڈٹ حکومت کو جاتا ہے ،میں نے پارلیمنٹ میں کہا انڈیا کے ہاتھ صاف نہیں ہیں۔ رینجرز نے کراچی میں امن قائم کیا ،رینجرز کے ہاتھوں کو روکنے والا پاکستان کے ساتھ نیکی نہیں کررہا