- الإعلانات -

بھاریتوں کے سرپھر شرم سے جھک گئے

بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی روس کے دو روزہ پر ماسکو پہنچ گئے‘روسی صدر ولادیمیر پیوٹن سے غیر رسمی ملاقات بھی کی ‘فوجی اور توانائی سمیت دیگر کئی شعبوں میں معاہدوں پر دستخط ہونے کا امکان ہے جبکہ بھارتیوں کو ایک اور شرمندگی کا سامنا ، قومی ترانہ بجنے کے دوران مودی احتراماً کھڑے ہونے کی بجائے چلتے رہے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی روس کے دو روزہ پر ماسکو پہنچ گئے، جہاں انہوں نے صدارتی محل میں روسی صدر ولادیمیر پیوٹن سے غیر رسمی ملاقات کی۔اس دورہ میں دونوں رہنماوں کے درمیان معاشی اور سیاسی معاملات پر باضابطہ مذاکرات ہوں گے۔ جس میں فوجی اور توانائی سمیت دیگر کئی شعبوں میں معاہدوں پر دستخط ہونے کا امکان ہے۔ دوسری جانب بھارت کے وزیراعظم نے ایک اور تاریخ رقم کر دی جی ہاں بدحواسی میں ایک اور ریکارڈ قائم کر کے دنیا کو ثابت کر دیا کہ احمق ترین وزیراعظم حقیقی طور پر وہ خود ہیں ، تازہ واقعہ پیش آیا ماسکو میں جب بھارت کا قومی ترانا بجا تو فرط جذبات سے مودی کا حال تو برا ہی ہوگیا ،احتراماًکھڑے ہونے کی بجائے چلنا شروع کر دیا۔میڈیا رپورٹس کے مطابق دنیا بھر میں سیر سپاٹے کر کے الٹی سیدھی حرکات کی وجہ سے اپنا مذاق بنانے والے مودی کاکوئی ثانی نہیں بھارتی وزیر اعظم ماسکو پہنچے تو ریڈ کارپٹ استقبال کے دوران ایسی حرکت کی کہ جس سے بھاریتوں کے سرپھر شرم سے جھک گئے قومی ترانہ بجنے کے دوران نریندر مودی کو احتراماً کھڑا ہونے کے لیے کہا گیا مگر انہوں نے روایتی بدحواسی کا مظاہرہ کیا اور اپنے پاو¿ں پر قابو نہ رکھ پائےاور ایک جانب چلنا شروع کر دیا ایسے میں انہیں فوراً ہوش دلایا گیا اور پکڑ کر واپس لانا پڑا جس کے بعد مودی نے ترانا سنا۔گوگل پر احمق ترین وزیر اعظم کا لقب پانے والے مودی اس سے پہلے بھی اپنی بدحواسیوں اور الٹی سیدھی حرکات کی وجہ سے جانے جاتے ہیں کبھی انجیلا مرکل نے ان کو آداب سکھائے توجنوبی کوریا کے دورے کے دوران اپنی ہی سوچوں میں گم سم ایک جانب چلنے کا واقعہ بھی خوب مذاق کا باعث بنا۔بھارتی وزیر اعظم کی بدحواسیوں کی اگلی قسط کا دنیا بھر کے شائقین کو شدت سے انتظار رہے گا۔