- الإعلانات -

ایران سعودی عرب سفارتی کشیدگی میں اضافہ

ایران میں مشتعل افراد نے سعودی عرب کے سفارت خانے پر حملہ کرکے اسے آگ لگانے کی کوشش کی ہے جب کہ سعودی عرب نے ریاض میں ایرانی سفیر کو 24 گھنٹے میں ملک چھوڑنے کا حکم دے دیا ہے۔غیر ملکی میڈیا کے مطابق سعودی حکام کی جانب سے گزشتہ روز 2 مذہبی رہنماو¿ں شیخ نمر النمر اور فارس الشویل کی سزائے موت پر عمل درآمد کے بعد ایران کے دارالحکومت تہران میں مشتعل افراد نے سعودی سفارت خانے پر حملہ کردیا۔ مشتعل افراد نے عمارت میں گھس کر توڑ پھوڑ کی جب کہ عمارت کو آگ لگانے کے لئے بم بھی پھینکے گئے تاہم واقعے میں اب تک کسی قسم کے جانی نقصان کی اطلاع نہیں ملی۔واقعے کے بعد سعودی عرب نے ریاض میں تعینات ایرانی سفیر کو 24 گھنٹے میں ملک چھوڑنے کا حکم دے دیا ہے۔ جس کے بعد دونوں ممالک کے درمیان کشیدگی سفارتی تعلقات کے معطل ہونے تک پہنچ گئی ہے۔واضح رہے کہ گزشتہ روز سعودی وزارت داخلہ نے اپنے بیان میں تصدیق کی تھی کہ سعودی عرب کے دو مذہبی رہنماو¿ں نمر النمر اور فارس الشویل کو اپنے پیروکاروں کو دہشت گردی اور حکومت مخالف سرگرمیوں پر اکسانے کے جرم میں سزائے موت دی جاچکی ہے۔