- الإعلانات -

بنگلا دیش میں انتخابی مہم کے دوران ہنگامہ آرائی، 3 افراد ہلاک

ڈھاکا: بنگلا دیش میں جاری انتخابی مہم کے دوران حکمراں اور اپوزیشن جماعتوں کے کارکنان کے درمیان تصادم میں 3 افراد ہلاک اور درجنوں زخمی ہوگئے۔

بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق بنگلا دیش میں انتخابی مہم کا آغاز خوشگوار ثابت نہیں ہوسکا۔ سیاسی جماعتوں کے کارکنان کے درمیان تازہ جھڑپ میں 3 افراد ہلاک اور 26 زخمی ہوگئے۔

بنگلا دیش کے جنوبی ضلع نواکھالی میں آج عوامی لیگ کی ریلی پر حملہ کیا گیا جس کے نتیجے میں 28 افراد زخمی ہوگئے جن میں سے 2 زخمی دوران علاج دم توڑ گئے۔ ہلاک ہونے والوں کا تعلق حکمراں جماعت عوامی لیگ سے ہے۔

سیاسی جماعتوں کے کارکنان کے درمیان تصادم کا دوسرا واقعہ فرید پور ضلع میں پیش آیا جہاں بنگلا دیش نیشنل پارٹی کے حامیوں نے حکمراں جماعت عوامی لیگ کے کارکن کو ڈنڈے مار کر قتل کردیا۔

بنگلا دیش میں 10 دسمبر کو الیکشن ہونے جا رہے ہیں، انتخابی مہم کا آغاز پیر سے ہو گیا ہے اور صرف تین دن کے دوران سیاسی جماعتوں کے کارکنان کے درمیان مختلف جھڑپوں میں 100 سے زائد افراد زخمی ہوگئے۔

واضح رہے کہ اپوزیشن رہنما خالدہ ضیاء اہم رہنماؤں کے ہمراہ اسیر جب کے ان کے بیٹے اور پارٹی چیئرمین جلاوطنی پر مجبور ہیں۔ اپوزیشن نے توقع کے برعکس گزشتہ ہفتے ہی الیکشن میں حصہ لینے کا اعلان کیا ہے جس کے بعد کشیدگی بڑھ گئی ہے۔