- الإعلانات -

کشش اور ذہانت کے درمیان تعلق

ایک پرانی کہاوت ہے کہ کسی بھی کتاب کا فیصلہ اس کے سرورق سے نہ کرو مگر ایسا نظر آتا ہے کہ اس سے بچنا لگ بھگ ہر کسی کے لیے ناممکن ہے۔

برطانیہ کی سینٹ اینڈریوز یونیورسٹی کے مطابق خوبصورت افراد لوگوں کو زیادہ ذہین لگتے ہیں اور شخصی کشش کسی بھی فرد کے بارے میں لوگوں کی رائے کو متاثر کرتی ہے۔

تحقیق کے دوران کشش اور ذہانت کے درمیان تعلق کو جاننے کے لیے سو طالبعلموں کی تصاویر اجنبی افراد کو دکھائی گئیں۔

نتائج سے معلوم ہوا کہ پرکشش افراد لوگوں کو زیادہ ذہین نظر آئے اور کشش کا ایک ہالہ ان کے ذہنوں پر چھایا ہوا محسوس ہوا۔

اس تجربے کے دوران 4 الگ گروپس بناکر تصاویر کی مدد سے خوبصورتی، ذہانت، تدریسی کارکردگی وغیرہ کے بارے میں ریٹنگ کے لیے کہا گیا اور یہ معلوم ہوا کہ جو سب سے زیادہ پرکشش افراد تھے انہیں سب سے زیادہ ذہین قرار دیا گیا۔

تحقیق کے مطابق اس سے عندیہ ملتا ہے کہ جسمانی کشش کے اثرات کسی شخص بارے میں پہلے تاثر کے حوالے سے غلط رہنمائی کرتے ہیں اور اس کے سنگین نتائج تعلیم اور ملازمتوں میں مرتب ہوسکتے ہیں۔

محققین کا کہنا ہے کہ شخصی کشش مسلسل ہمارے خیالات پر اثرانداز ہوتی ہے اور ہم سیاست، قیادت، قانون، بچوں کو سزا، ملازمت میں ترقی غرض ہر شعبے میں تعصبانہ فیصلے کرنے لگتے ہیں۔

یہ تحقیق طبی جریدے جرنل پلوس ون میں شائع ہوئی۔