- الإعلانات -

تعلیم مکمل نہ کرنے والابھارتی گوگل کا سی ای او بن گیا

Sndar-pichai

انٹر نیٹ کی بڑی کمپنیوں میں سے ایک گوگل نے پیر کے روز اپنی کمپنی کو ایک نئی شکل دے دی ہے۔ گوگل اگرچہ اپنا وجود قائم رکھے گی تاہم اس نے اپنے بہت سے نئے کاروباری معاملات کو مختلف کمپنیوں کی شکل میں ڈھال لیا ہے۔ یہ چھوٹی کمپنیاں ایک بڑی کمپنی ’’الفابیٹ‘‘ کا حصہ ہوں گی۔ گوگل کے چیف ایگزیکٹو آفیسر لیری پیج اب نئی کمپنی کے سی ای او ہوں گے۔ پیج کی جگہ گوگل کے نئے سی ای او بھارتی نژاد سندر پیچائی ہوں گے۔ اگر چہ سندر نے نئی ذمہ داریاں سنبھالنے کے بعد اپنی بلاگ پوسٹ میں لکھا ہے کہ گوگل اب ’’سکڑ‘‘ جائے گی تاہم پیچائی کے پاس کرنے کو اب بھی بہت کچھ ہے۔ گوگل نے اپنے پرانے کاروبار کے بہت سے حصے اپنے پاس رکھے ہیں۔ جو چیزیں اب بھی گوگل اور پیچائی کے پاس ہیں ان میں سرچ، اشتہارات،میپس، ایپس، یو ٹیوب اور اینڈرائڈ شامل ہیں۔ اگر یہ کہا جائے کہ انہی مصنوعات کی وجہ سے گوگل آج دنیا کی بڑی انٹر نیٹ کمپنی ہے تو اس میں مبالغہ نہ ہو گا۔ ان سب چیزوں کا گوگل کے پاس رہنے کا مطلب یہ ہے کہ اب بھی ہزاروں ملازمین پیچائی کو جواب دہ ہوں گے۔ پیچائی سٹین فورڈ یونیورسٹی سے اپنی تعلیم مکمل نہ کر پائے لیکن پچھلی ایک دہائی سے وہ کمپنی کا نمایاں ترین چہرہ ہیں۔ سی سی او کی ذمہ داریاں سنبھالنے سے قبل وہ گوگل کے نائب صدر تھے۔ پیچائی جب سے گوگل میں آئے ہیں انہوں نے ہی اس کی تمام کنزیومر پراڈکٹس کو لوگوں کے سامنے پیش کیا ہے اور وہ کمپنی کی جانب سے منعقدہ تمام سالانہ پروگراموں کی میزبانی بھی کرتے رہے ہیں۔