- الإعلانات -

کیا ذیابیطس کے مریض کیلے کھاسکتے ہیں؟

کیلا ایسا پھل ہے جو لگ بھگ سارا سال ہی دستیاب ہوتا ہے مگر اکثر افراد اس خیال سے پریشان رہتے ہیں کہ ذیابیطس کے مریضوں کے لیے اس مزیدار پھل کو کھانا محفوظ ہے یا نہیں۔

ویسے اس کی تفصیل میں جانے سے پہلے یہ جان لیں کہ کسی پھل میں مٹھاس ذیابیطس کے لیے اتنی اہم نہیں ہوتی جتنی اس میں موجود گلیسمیک انڈیکس (جی آئی)۔

جی آئی ایک پیمانہ ہے کہ جو بتاتا ہے کہ کاربوہائیڈریٹ والی غذا کا کتنا حصہ کھانے کے بعد اس میں موجود مٹھاس (گلوکوز) مخصوص وقت میں خون میں جذب ہوسکتی ہے اور یہ ذیابیطس کے مریضوں کے لیے اہمیت رکھتا ہے۔

انٹرنیشنل جی آئی ڈیٹابیس کے مطابق کیلوں کا جی آئی اسکور 51 ہے۔

55 یا اس سے کم اسکور والی جی آئی غذاﺅں کو ذیابیطس مقدار کا خیال رکھ کر کھاسکتے ہیں۔

تو کیا کیلے ذیابیطس کے مریضوں کے لیے فائدہ مند ہیں یا نہیں؟

تو اس کا جواب طبی ماہرین ان الفاظ میں دیتے ہیں کہ ذیابیطس کے مریض محدود مقدار میں کیلوں کو اپنی غذا کا حصہ بناسکتے ہیں۔

اس پھل میں موجود فائبر، وٹامن اور منرل ذیابیطس کے مریضوں کے لیے فائدہ مند ہوتے ہیں ، بس یہ خیال رکھنا ضروری ہے کہ اسے زیادہ تعداد میں کھانے سے گریز کیا جائے۔

ایک تحقیق میں دریافت کیا گیا کہ کیلے کھانے کے بعد بلڈگلوکوز پر براہ راست اثرات مرتب نہیں ہوتے بلکہ اسے ہر صبح کھانا فاسٹنگ بلڈگلوکوز کی سطح کو نمایاں حد تک کم کرتا ہے۔

تاہم اس تحقیق میں شامل افراد کا کہنا تھا کہ اس حوالے سے زیادہ بڑی تحقیق ہے تاکہ نتائج کی تصدیق کی جاسکے۔

2017 کی ایک اور تحقیق میں دریافت کیا گیا کم جی آئی والے پھل ذیابیطس کے مریضوں کے لیے کھانا محفوظ ہوتا ہے جبکہ پھلوں کے استعمال سے ذیابیطس میں مبتلا ہونے کا خطرہ بھی کم کیا جاسکتا ہے۔

امریکن ڈائیبیٹس ایسوسی ایشن کا کہنا ہے کہ ذیابیطس کے مریضوں کو اپنی کنٹرول غذا میں پھلوں کو شامل کرنا چاہیے۔

کیلے متعدد حجم میں دستیاب ہوتے ہیں مگر ذیابیطس کے مریضوں کو چھوٹے کیلے کا انتخاب کرنا چاہیے، کیونکہ ان میں 20 گرام سے زیادہ کاربوہائیڈریٹس ہوتا ہے جبکہ بڑے سائز کے کیلے میں یہ مقدار 35 گرام کے قریب ہوتی ہے۔

کتنے کیلے روز کھاسکتے ہیں؟

اس سوال کا جواب ہر فرد میں مختلف ہے اور اس کا انحصار جسمانی سرگرمیوں اور اس بات پر ہے کہ کیلے کس طرح بلڈشوگر کو بدلتے ہیں۔

کچھ لوگوں میں بلڈگلوکوز کیلوں کے حوالے سے زیادہ حساس ہوتا ہے، کسی فرد میں کیلے کے بلڈشوگر پر مرتب ہونے والے اثرات ضرورت پڑنے پر ادویات اور انسولین کے استعمال کے بارے میں بھی مدد دے سکتے ہیں۔

نوٹ: یہ مضمون عام معلومات کے لیے ہے۔ قارئین اس حوالے سے اپنے معالج سے بھی ضرور مشورہ لیں۔