- الإعلانات -

پنجاب: کورونا کے مریضوں سے مقررہ رقم سے زائد وصولی پر 8 ہسپتالوں کو نوٹس

ملتان: پنجاب ہیلتھ کیئر کمیشن نے کووِڈ 19 کے مریضوں سے حکومت کی جانب سے فروری میں مقرر کردہ نرخوں سے زائد رقم کی وصولی پر 8 نجی ہسپتالوں کو نوٹسز جاری کردیے۔

اس حوالے سے جاری باضابطہ بیان کے مطابق ان ہسپتالوں میں لاہور میں قائم اتفاق ہسپتال، فاطمہ میموریل ہسپتال، اکرم میڈیکل کمپلیکس، مسعود ہسپتال، لاہور کیئر ہسپتال اور اے وی سینا ہسپتال جبکہ ملتان کا بختاور امین ٹرسٹ اینڈ میڈی کیئر شامل ہے۔

نوٹس میں ان ہسپتالوں کی انتظامیہ کو حکومت کی ہدایات پر علمدرآمد کے لیے 24 گھنٹوں کی مہلت دی گئی اور خبردار کیا گیا کہ ہدایات پر عمل نہ کرنے کی صورت میں عمارت سیل کردی جائے گی۔

دوسری جانب لاہور کے سرجیمیڈ ہسپتال اور ثروت انور میڈیکل کمپلیکس اور راولپنڈی کے احمد میڈیکل کمپلیکس میں آپریشنز اور اندرونی سروسز معطل کردی گئیں۔

تاہم ان ہسپتالوں کو کووِڈ 19 کے مریضوں کا علاج اور ہنگامی خدمات جاری رکھنے کا بھی کہا گیا۔

نوٹس میں مزید کہا گیا کہ ان ہسپتالوں کی انتظامیہ کو حکومت کی جانب سے فروری میں مقرر کردہ نرخوں کے مطابق کووِڈ 19 کے مریضوں کا علاج کرنے اور ہسپتال کی عمارت، ویب سائٹ پر تمام خدمات کے نرخوں کی فہرست آویزاں کرنے کی ہدایت کی گئی۔

ان نرخوں میں آئیسولیشن وارڈ میں بیڈ یا کمرے، ہائی ڈپینڈینسی یونٹ، انتہائی نگہداشت یونٹس، وینٹیلیٹر سروسز کے روزانہ کے چارجز اور ایکٹرمرا انجیکشن (جہاں دستیاب ہوں) کی قیمت شامل ہے۔

اس ضمن میں پنجاب ہیلتھ کمیشن کے ترجمان نے بتایا کہ 16 جون کو ہسپتالوں کو فروری میں مقرر کردہ نرخ پر خدمات فراہم کرنے کی ہدایت کی گئی تھی جس پر زیادہ تر نجی ہسپتالوں سے مثبت ردِ عمل دیا۔

عہدیدار کا کہنا تھا کہ ’پنجاب ہیلتھ کمیشن کی ٹیمز ہسپتالوں کی مسلسل نگرانی کررہی ہیں اور ہدایات پر عملدرآمد نہ ہونے کی صورت میں سخت کارروائی کے ساتھ ساتھ خلاف ورزی کرنے والے ہسپتالوں کی عمارت کو بھی سیل کردیا جائے گا۔