- الإعلانات -

کونسا سا گوشت کینسر کا مرض بن سکتا ہے جانیئے اس خبر میں

عالمی ادارہ صحت کی رپورٹ کے مطابق سرخ گوشت خصوصاً ڈبے میں بند گوشت کا استعمال بڑی آنت کے کینسر کا سبب بنتا ہے۔ ڈبلیو ایچ او کی یہ تازہ ترین رپورٹ دنیا کے 10 ممالک کے 22 ماہرین نے مل کر تیار کی ہے۔ فرانسیسی شہر لیون میں قائم انٹرنیشنل ایجنسی فار ریسرچ آن کینسر کے مطابق اس جائزے سے یہ انکشاف ہوا ہے کہ ریڈ میٹ میں گائے، بچھڑے، خنزیر، دنبے، بکرے اورگھوڑے کا گوشت شامل ہے جبکہ عمل ش±دہ گوشت جس میں ہاٹ ڈوگ، ساسیجز، نمک کے ذریعے م??حفوظ کیے گئے یا کورنڈ بیف، کینڈ میٹ یا گوشت سے تیار کردہ سوس وغیرہ شامل ہیں۔ دونوں کے بارے میں ہونے والی ریسرچ سے پتہ چلا ہے کہ یہ انسانوں میں بڑی آنت کے سرطان کا سبب بنتی ہیں۔ اس کے علاوہ یہ ل±بلبے اور مثانے کے کینسر میں مبتلا ہونے کا سبب بنتا ہے۔<br/> انٹرنیشنل ایجنسی فار ریسرچ آف کینسر کا کہنا ہے کہ گائے کے گوشت میں انسانی صحت کے لیے ضروری غذائیت بھی پائی جاتی ہے اس لیے صحت عامہ کے امور سے متعلق حکام کو گوشت کے فوائد اور اس کے بہت زیادہ استعمال کے نقصانات دونوں کے درمیان توازن کے لیے عوام میں شعور بیدار کرنا چاہیے۔ ریڈ میٹ کے نقصانات اتنے ہی سنگین نوعیت کے ہو سکتے ہیں جتنا کے تمباکو نوشی، دھواں اور اسبسٹاس وغیرہ کے ہوتے ہیں۔