- الإعلانات -

وہ غذائیں جو فوری طور پر کمر درد سے نجات دلائیں

ہماری آج کل کی مصروف زندگی میں جسمانی سرگرمیاں بے حد کم ہوگئی ہیں اور ہمارے دن کا زیادہ تر حصہ مختلف اسکرینز کے ساتھ گزرتا ہے، یہ عادت بد ہمیں مختلف بیماریوں میں مبتلا کرنے کا سبب بن رہی ہے۔ اس طرز زندگی کا سب سے پہلا اثر کمر درد کی صورت میں ظاہر ہوتا ہے، جسمانی طور پر متحرک رہنے والے بعض افراد بھی کمر درد کا شکار ہوجاتے ہیں کیونکہ ان کی غذا ناقص ہوتی ہے۔ کمر درد سے نجات پانے کے لیے چند گھریلو اور تراکیب پیش کی جارہی ہیں جن پر مستقل مزاجی سے عمل کر کے آپ اپنے دائمی کمر درد سے نجات حاصل کرسکتے ہیں۔

ادرک

ادرک میں وہ تمام غذائی اجزا پائے جاتے ہیں جو ہر طرح سے انسانی صحت کے لیے مفید ہیں۔ کمر کے جس حصے میں آپ کو درد کی مستقل شکایت ہو وہاں ادرک کا پیسٹ یوکلپٹس کے تیل کے ساتھ ملا کر اچھی طرح لگائیں تاکہ یہ جذب ہوجائے۔ اس پیسٹ کو روزانہ لگا کر اچھی طرح مساج کریں۔ اس سے کمر درد میں ضرور افاقہ ہوگا۔ اس کے علاوہ ادرک کے چند ٹکڑوں کو باریک کاٹ کر 10 سے 15 منٹ تک ابال لیں اور پھر بغیر فریج کے ٹھنڈا کرلیں، پھر اس میں ایک کھانے کا چمچ شہد شامل کرکے پی لیں۔ ادرک والی چائے دن میں دو سے تین مرتبہ پینے کے چند دنوں بعد ہی آپ اپنی کمر درد میں بہتری محسوس کرنے لگیں گے۔

تلسی کے پتے

ایک کپ پانی میں 8 سے 10 تلسی کے پتے شامل کر کے اتنی دیر ابالیں کہ پانی آدھا کپ رہ جائے، اس پانی کو کمرے کے درجہ حرارت میں ہی ٹھنڈا ہونے کے لیے رکھ دیں۔ جب ٹھنڈا ہوجائے تو اس میں ایک چٹکی نمک شامل کردیں۔ اگر کمر کا درد ہلکا اور کم ہے تو اس پانی کو دن میں ایک بار لیکن اگر درد کی شدت زیادہ ہے تو اسے دن میں دو بار استعمال کریں۔ نمک ملا تلسی کے پتوں کا پانی پینے سے کمر کے درد میں فوری طور پر کمی واقع ہونے لگتی ہے۔

خشخاش

100 سو گرام خشخاش اور مصری کو ملاکر گرینڈر میں اچھی طرح پیس لیں اور 2 چائے کا چمچ روزانہ ایک گلاس دودھ کے ساتھ پی لیں۔

لہسن

روزانہ صبح نہار منہ دو سے تین لہسن کے جوئے کھالیں، اس کے علاوہ آپ لہسن کے تیل سے متاثرہ جگہ پر مساج بھی کرسکتے ہیں۔

برف

کولڈ کمپریسر جو کہ برف سے بنے ہوتے ہیں، ہر قسم کے درد میں آرام پہنچانے میں مدد کرتے ہیں۔ برف کے چند ٹکڑوں کو ایک پلاسٹک بیگ میں باندھ لیں، اب اس پلاسٹک بیگ کو ایک چھوٹے تولیے میں لپیٹ دیں اور متاثرہ حصہ پر دس سے پندرہ منٹ تک مساج کریں۔ دن میں ایک بار یہ عمل کرنے کے ایک یا ڈیڑھ گھنٹہ کے وقفہ کے بعد دوبارہ مساج کرسکتے ہیں۔

دودھ

دودھ میں کیلشیئم کی وافر مقدار پائی جاتی ہے جس سے نہ صرف آپ کی ہڈیاں مضبوط ہوتی ہیں بلکہ یہ آپ کے پٹھوں اور مسلز کو بھی مضبوطی اور طاقت عطا کرتا ہے۔دودھ کا ایک گلاس اپنی روزمرہ کی زندگی کا لازمی حصہ بنالیں، نیم گرم ایک گلاس دودھ میں ایک چائے کا چمچ شہد شامل کرکے پی لیں۔ کیلشیئم کی مطلوبہ مقدار جسم کو ملنے کے بعد کمر کے درد میں افاقہ ہوگا۔