- الإعلانات -

ہم بلا واسطہ ہر سال تقریباً ایک کلوگرام حشرات اور کیڑے مکوڑے کھاتے ہیں.امریکی ماہرین

نیو یارک: اکثر لوگ کیڑوں مکوڑوں کی اپنے پاس موجودگی سے بھی گھبراتے ہیں مگر غذائی امور کے ماہرین کاکہنا ہے کہ ہم بلا واسطہ ہر سال تقریباً ایک کلوگرام حشرات اور کیڑے مکوڑے کھاتے ہیں ۔دلچسپ بات یہ ہیں کہ امریکی فوڈ اینڈ ڈرگ ایڈمنسٹریشن کے مطابق غذاﺅں کو کیڑوں مکوڑوں سے مکمل طور پر پاک رکھنا نا ممکن ہے اور یہی وجہ ہیں کہ اس کی جاری کردہ گائیڈ کے مطابق پاستے جیسی غذا 225 گرام میں حشرات کے 225 ٹکڑے یا اعضاءشامل ہو جائیں تو کوئی قابل اعتراض بات نہیں۔اسی طرح کشمکش کے ایک کپ میں پھلوں پر بھنبھنانے والی مکھی کے33 انڈوں کی اجازت ہے لیکن حقیقت میں ہماری خوراک میں کیڑوں مکوڑوں اور حشرات کی مقدارکے بارے میں کچھ واضح نہیں کہاجاسکتا۔ دوسری جانب اقوام متحدہ کی فود اینڈ ایگری کلچر آرگنائزیشن کا کہنا ہے کہ 2050ءتک انسانی آبادی نو ارب تک ہوجائے گی اور اس کی غذائی ضروریات کو پورا کرنے کیلئے حشرات کو استعمال کرنا ضروری ہو گا ۔