- الإعلانات -

یوم بینائی:66فی صد پاکستانی نظر کی کمزوری کا شکار

پاکستان کی آبادی کا 66 فیصد حصہ آنکھوں کی کمزوری کا شکار ہے، ماہرین چشم کہتے ہیں آنکھوں کی بیماریوں کی 80 فیصد روک تھام باآسانی کی جاسکتی ہے۔

آنکھ انسانی جسم کا اہم عضو ہے ۔عالمی اداروں کے مطابق دنیا بھرمیں اٹھا رہ کروڑ افراد برو قت تشخیص نہ ہونے کے باعث نا بینا پن کی جانب جارہے ہیںاور یہ تعداد 2020 تک 36 کروڑ تک پہنچ جائے گی۔

ماہرین چشم کے مطابق بڑھتی عمر،شو گر اور وٹامن اے کی کمی بینائی کی کمزوری کی بڑی وجوہات ہیں ۔

ماہرین کے مطابق پاکستان میں 66فیصد لوگ مو تیا،6 فیصد کالے پانی اور 12 فیصد بینائی کی کمزوری کا شکار ہیںجو بتدریج نا بینا پن کی طرف جاتے ہیں ۔

امراض چشم کے ماہرین کہتے ہیں کہ والدین بچوں کی بینائی کے حوالے سے بے احتیاطی نہ برتیں ۔ہر فرد کو سال میں کم سے کم ایک بار آنکھوں کا معائنہ ضرور کرانا چاہیے۔اسی سلسلے میں ہر سال بینائی سے آگاہی کا دن منایا جاتا ہے آج اس کاعالمی دن ہے۔

ماہرین چشم کا کہنا ہے کہ ملک میں نا بینا پن کی بنیادی وجہ آنکھوں کا مو تیا ہے۔