- الإعلانات -

پنجاب فوڈ اتھارٹی نے ہزاروں لیٹر غیر معیاری دودھ تلف کر دیا

لاہور : ملک میں خالص دودھ کے نام پر زہر بکنے لگا، پنجاب فوڈ اتھارٹی نے ہزاروں لیٹر غیر معیاری دودھ تلف کر دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق دودھ زندگی تھا، زہر بنا دیا گیا، اب کچھ نہیں پتہ آپ اپنے شیر خوار بچے کو جو کچھ پلا رہے وہ دودھ ہے یا زہر، آج ہی لاہور اور گوجرانوالہ میں ایسا دودھ پکڑا گیا، جس کی مقدار بڑھانے اور گاڑھا کرنے کےلئے یوریا کھاد اور دیگر زہریلے کیمیکل کی آمیزش کی گئی تھی اور یہ آمیزش کرنے والے سرحد پار سے آنے والے دہشت گرد نہیں وہی لوگ ہیں جو روز ہمارے آپ کے ساتھ نمازیں پڑھتے ہیں خوشی غمی میں ہمارے ساتھ شریک ہوتے ہیں اور ہر صبح ہمارے دروازے پر آواز لگا کر کہتے ہیں کہ خالص دودھ لے لو۔

مگر وہ کہہ رہے ہیں کہ ہم زہر لائے زہر لے لو، گوجرانوالہ میں ہزاروں لیٹر مضر صحت دودھ نہر میں بہا دیا گیا، دودھ کی سپلائی پلاسٹ کے ڈرموں میں ممنوع ہے، مگر اسے پلاسٹک کے ڈرموں ہی فراہم کیا جاتا ہے۔

لاہور میں صوبائی وزیر خوراک بلال یاسین خود میدان میں اترے اور غیر معیاری دودھ ضائع کرایا، ان کا کہنا تھا کہ دودھ میں ملاوٹ کا سلسلہ ابھی جاری اسے روکنا ہے تو معاشرے کو ایک ہونا ہوگا ورنا دودھ نہیں زہر پینا ہوگا۔