- الإعلانات -

ناشتے میں یہ غذا ذیابیطس سے تحفظ دے

ویسے تو کہا جاتا ہے کہ مکھن کا بہت زیادہ استعمال کولیسٹرول کی سطح بڑھانے سمیت دیگر طبی مسائل کا باعث بنتا ہے مگر یہ ذیابیطس سے تحفظ بھی فراہم کرسکتا ہے۔

یہ دعویٰ ایک امریکی طبی تحقیق میں سامنے آیا۔

فرائیڈ مین اسکول آف نیوٹریشن سائنس اینڈ پالیسی کی تحقیق میں چھ لاکھ سے زائد افراد پر مکھن کے اثرات کا تجزیہ کیا گیا تاکہ جانا جاسکے کہ یہ امراض قلب اور ذیابیطس جیسے دیگر امراض کا باعث تو نہیں بنتا۔

نتائج سے معلوم ہوا کہ جو لوگ مکھن کھاتے ہیں، ان میں امراض قلب کا خطرہ نہیں بڑھتا جبکہ جو لوگ روزانہ ناشتے میں اسے استعمال کرتے ہیں، ان میں ذیابیطس ٹائپ ٹو جیسے مرض کا خطرہ چار فیصد تک کم ہوسکتا ہے۔

محققین کا کہنا تھا کہ اس حوالے سے مزید تحقیق کی ضرورت ہے کہ آخر مکھن کھانا ذیابیطس سے کیسے تحفظ فراہم کرسکتا ہے۔

تاہم محققین کے خیال میں اس میں موجود مونو ان سچورٹیڈ فیٹس بلڈ شوگر اور انسولین کی حساسیت کو بہتر کرتے ہیں۔

اسی طرح سیچوریٹڈ فیٹ کی ایک قسم ہیپٹاڈیکانوک ایسڈ انسانوں میں ذیابیطس سے قبل کی علامات کو ریورس کرنے میں مدگار ثابت ہوسکتی ہے، جو کہ مکھن میں پائی جاتی ہے۔

تحقیق کے مطابق اگر آپ کو پسند نہیں تو مکھن کھانے کی ضرورت نہیں مگر یہ ذہن میں رہے کہ اس کا استعمال ذیابیطس سے بچا سکتا ہے۔

تاہم اعتدال میں کھانا ہی بہتر ہے کیونکہ ہر چیز کی زیادتی نقصان دہ ہی ثابت ہوتی ہے۔

اس تحقیق کے نتائج طبی جریدے جرنل پلوس ون میں شائع ہوئے۔