- الإعلانات -

ایلوویرا کی جادوئی خوبیاں

اکثر افراد ایلوویرا جیسے کرشماتی اور جادوئی پودے کے کمالات سے واقف نہیں۔اکثر لوگ یہ سمجھتے ہیں کہ یہ کاسمیٹکس میں استعمال ہو تا ہے یا زیادہ سے زیادہ چہرے کو تازگی بخشتا ہے، یہ نہ صرف مکمل صحت فراہم کرتا ہے بلکہ حسن و خوبصورتی میں اضافے کا سبب بھی بنتا ہے۔
لیکن یہ حیرت انگیز طور پر ہر طرح سے فائدہ مند ہے۔ ایلوویرا جیل نہ صرف چہرے کی جلد کے لیے سودمند ثابت ہوتا ہے بلکہ کیڑے کاٹنے ، خارش، زخم اور Rashesوغیرہ میں فوری آرام دیتا ہے۔ اس کی وجہ یہ ہے کہ ایلوویرا میںAnti-Fungalاور Anti-Bacterialوافر مقدار میں پایا جاتا ہے۔ اس کے علاوہ انسانی جسم میں خلیوں (Cells)کی ری جنریشن میں بھی مدد گار ثابت ہوتا ہے۔ اس میں موجود قدرتی اجزائ انسانی صحت کے لیے مفید ہیں۔
ایلوویرا کی مختلف اقسام
ایلوویرا کے پتے دو قسم کی خاص چیزیں پروڈیوس کرتے ہیں ، ایک جیل اور دوسرا Latex(پتوں میں سے رسنے والا سفید سیال دودھ)جوکہ میڈیسن تیار کرنے میں استعمال کیا جاتا ہے۔ ایلوویرا جیل ، جیلی کی طرح کا ایک صاف ستھرا محلول ہے جوکہ گاڑھی شکل میں ہوتا ہے یہ ایلوویرا کے پودے کے انتہائی اندرونی حصوں میں پایا جاتا ہے جبکہ ایلو Latexپتوں کی اوپری جلد میں پایا جاتا ہے اور پتہ کو درمیان میں سے توڑنے سے یہ باہر نکل آتا ہے یہ پیلاہٹ مائل سفید رنگ کا انتہائی پتلامحلول ہوتا ہے۔ایلوLatexعام طور پر قبض وغیرہ کی شکایت کو دور کرنے کے لیے استعمال کیا جاتا ہے۔جبکہ ایلو جیل جلد کے مسائل کو حل کرنے کے لیے استعمال میں لایا جاتا ہے اس کے علاوہ ایلوویرا میں کینسرسے نبردآزما ہونے کے اجزائ بھی پائے جاتے ہیں نہ صرف یہ بلکہ انسانی جسم میں Immuneسسٹم کو فعال کرنے میں بھی اہم کردار ادا کرتے ہے۔
بیماریوں کا علاج
ایلوویرا جیل عام طور پرOsteoarthritisیعنی جوڑوں کا دردکے علاوہ دیگر بیماریاں جیسے السر،بخار، خارش یا الرجی اور جلنے کے زخم کے لیے استعمال کیا جاتا ہے۔ اس کے علاوہ ایلو جیل ذیابیطس، استھمااور لیزر سے کیئے جانے والے ٹریٹمنٹ کی بدولت ہوجانے والے سائڈ افیکٹس کی درستگی کے لیے بھی استعمال کیا جاتاہے۔
عام طور پر ایلو Latexکو قبض کی شدید شکایت کو دور کرنے کے لیے استعمال کیا جاتا ہے۔اس کے علاوہ ایلو جیل مرگی، استھما، ٹھنڈ، خون کے اخراج، ماہانہ ایام میں بے قاعدگی، قولنج، ڈپریشن، ذیابیطس، سوجی یا پھولی ہوئی رگیں اور بصری بیماریوں کے علاج میں موثر ثابت ہوتا ہے۔
غذائیت سے بھرپور
غذائی اعتبار سے بھی ایلوویرا ایک مکمل غذائی اجزائ سے بھرپور پودا ہے جوکہ قدرتی ذرائع سے مالا مال ہے اس کے گودے یا جوس میں وٹامن B-12اور فائبر کی بھاری مقدار ہوتی ہے۔ اس کے علاوہ اس میں Anti-Oxidantsوٹامنز A,E,Cموجود ہوتے ہیں۔ اس پودے کی سب سے بڑی خاصیت یہ ہے کہ کسی بھی طرح سے جلنے کی صورت میں یہ شفائ بخش ثابت ہوتا ہے۔ اس کے علاوہ جسم کے کسی حصے پر ہوجانے والی سوجن کا بھی اس سے علاج کیا جاتا ہے۔ ایلوویرا جیل اور Latexقدرتی ذخائر سے مالا مال ہے جن کا اندرونی اور بیرونی استعمال انسانی صحت اور تندرستی کے لیے ہر لحاظ سے سود مند رہتا ہے۔
ایلوویرا کو ہربل بیوٹی کے طور پر بھی استعمال کیاجاتا ہے۔ ایلوویرا جیل ہر قسم کی اسکن کے لیے بہترین موئسچرائزر کا کام دیتاہے۔ یہ چہرے پر سے کیل مہاسے ،میل کچیل کا صفایا کرتا ہے اور دانوں کو بھی ختم کرتا ہے۔
ایلوویرا فیس پیک
جن خواتین کی جلد نارمل ہوتی ہیں۔ ایلوویراکا فیس پیک ان کے لیے جادوئی حیثیت رکھتا ہے۔ ایلوویرا موئسچرائزر سے بھرپور جیل ہوتا ہے جو خواتین منرل Basedمیک اپ استعمال کرتی ہیں ان کے لیے ضروری ہے کہ میک اپ کرنے سے پہلے چہرے پر ایلو جیل اچھی طرح لگائیں پھراس پر میک اپ کریں اس سے میک اپ کرنے کے بعد اسکن خشک اور کھچی کھچی سے محسوس نہیں ہوگی۔* ایلو جیل میں قدرتی طور پر شامل وٹامن سی اور ای کی وجہ سے چہرے پر دانے جلد ختم ہوجاتے ہیں بلکہ چہرے پر موجود لائنیں اور مختلف نشانات بھی ختم ہوجاتے ہیں۔ایلوویرا جیل میں چند قطرے لیموں کارس ڈال کر اچھی طرح سے مکس کرلیں پھر اس پیسٹ کو پندرہ منٹ کے لیے چہرے پر لگائیں اس کے بعد نیم گرم پانی سے چہرہ دھولیں اس طریقہ کار سے چہرہ کی اسکن نہ صرف چمکدار اور ہموار محسوس ہوگی بلکہ اس میں تروتازگی بھی پیدا ہوگی۔اگر چہرے پر داغ،دھبے،کیل مہاسے اور پھنسیاں ہیں اور اس کے علاوہ جھریاں اور لائنیں بھی ہوتی ہوں تو ایلو جیل میں عرقِ گلاب شامل کرکے بیس منٹ تک چہرے پر لگائیں اس فیس پیک کے متواتر استعمال سے چہرے پر ہر قسم کے داغ اور دھبے دور ہوجاتے ہیں اور اسکن ٹائٹ ہوتی ہے۔ ایلو جیل دھونے کے بعد دودھ میں روئی بھگوکر چہرے پر لگائیں۔*ایلوویرا کے پتوں کو ا±بال لیں ا±بالنے سے پہلے اس کے Thronنکال کر پھینک دیں۔ ا±بالنے کے بعد ان پتوں کو بالکل پتلا پیس لیں۔ اب اس میں ایک چمچہ شہد ڈال کر بیس منٹ کے لیے چہرے پر لگائیں۔ چکنی جلدوالی خواتین ہر ہفتے اس فیس پیک کو استعمال کرسکتی ہیں۔ اس سے اسکن کی زائدچکنائی ختم ہوجائے گی۔جن خواتین کی جلد حساس ہے انہیں چاہئے کہ ایلوجیل میں کھیرے کا رس،دہی اور عرق گلاب شامل کرکے چہرہ پر پندرہ منٹ تک کے لیے لگالیں۔ اگر عرق گلاب نہیں ڈالنا چاہتیں تو اس کی جگہ Essentialآئل بھی شامل کیاجاسکتا ہے۔ فیس پیک صاف کرنے کے لیے ہلکے نیم گرم پانی کا استعمال کریں۔*وہ خواتین جو اپنی خشک اور ڈل اسکن کے ہاتھوں پریشان رہتی ہیں اور اس سے انہیں کئی مسائل کا بھی سامنا کرنا پڑتا ہے۔ ایسی خواتین کے لیے بھی ایلو جیل کا فیس پیک بہترین ٹانک کاکام دیتا ہے۔ اس کے لیے ایلو جیل میں کاٹج چیز ، کھیرا اور لیموں کا رس ہم وزن ملالیں اور اچھی طرح مکس کرکے تیس منٹ تک کے لیے چہرے پر لگالیں۔*ڈیڈ یا مردہ جلد خواتین کے لیے ایلو جیل ماسک بہترین ثابت ہوتا ہے۔ ایلو جیل میں کھیرا کارس اور جو شامل کر لیں اس پیسٹ سے چہرے پرپانچ منٹ تک سرکل میں مساج کریں اور دس منٹ کے لیے چھوڑ دیں،یہ عمل چہرے کے اندر موجود ڈیڈسیل کا خاتمہ کرے گا۔ خون کی گردش میں روانی آئے گی جس سے چہرہ دمک اٹھے گا۔ ہفتہ میں دوبارہ یہ عمل کرنے سے اسکن مستقل طور پر صحت مند اور تروتازہ رہنے لگے گی۔ایلو ویرا کا جیل بالوں کے لیے بھی ہر طرح سے مفید رہتا ہے۔ایلو کنڈیشنربنانے کے لیے 4اونس پانی اور 4اونس ایلو جیل کو اچھی طرح مکس کرکے ایک اسپرے بوتل میں ڈال دیں ساتھ ہی اس میں Essentialآئل بھی شامل کرلیں دوبارہ سے اچھی طرح ہلالیں۔ بہت زیادہ گھنے یا کرلی بالوں والی خواتین شیمپو کرنے کے بعد اس کنڈیشنر کا اسپرے کریں اور جیسے چاہے بال بنائیں کیونکہ اس اسپرے کنڈیشنر سے بال ایک دم نرم ملائم اور سیدھے ہو جائیں گے۔یہ بازاری کنڈیشنر کی نسبت بہت ہلکا ثابت ہوتا ہے۔ ایلو جیل میں موجود قدرتی موئسچرائزر ہونے کی وجہ سے بال خشک ہونے سے محفوظ رہتے ہیں۔اگر شیمپو کرنے سے پہلے ایلو جیل کا مساج اچھی طرح سے بالوں کی جڑوں میں لگایا جائے تو یہ ڈیڈ سیل کا خاتمہ کرے گا اور خشکی کو بھی دور کرے گا بالوں کو لمبا، گھنا اور چمکدار بنانے کے لیے بھی ایلوویرا جیل جادوئی حیثیت رکھتاہے۔ اس کے لیے آدھا کپ ایلو جیل (براہِ راست پودے سے حاصل کیا ہوا)میں دو چمچہ کسٹر آئل ، دوچائے کا چمچہ میتھی پاو¿ڈر اور ایک چمچہ باسل پاو¿ڈر لے لیں اور ان تمام اجزائ کو اچھی طرح مکس کرلیں رات سونے سے قبل اسے بالوں میں اندرونی جگہوں پر اچھی طرح لگادیں اور لگانے کے بعد شاور کیپ پہن لیں۔ صبح بالوں کو پہلے پانی سے دھولیں اور پھر شیمپو کریں۔