- الإعلانات -

جمائیاں آنے کی وجہ کیا ہے ؟

اسلام آباد: اکثر ایسا ہوتا ہے کہ کام کے دوران ہمیں بہت زیادہ جمائیاں آتی ہیں لیکن باوجود کوشش کے ہم انہیں روک بھی نہیں پاتے۔حا ل ہی میں ہونے والی تحقیق میں بتایا گیا ہے کہ اگر ساری رات پرسکون نیند لینے کے باوجود بھی آپ کو جمائیاں آتی ہیں تو اس کی وجہ موٹاپا اور ذہنی تناﺅ ہے۔امریکی ادارے Penn State College of Medicineکے ماہر جولیو فرنینڈیز مینڈوزاکا کہنا ہے کہ موٹاپا اور بڑھتا وزن ہمیں بتا سکتا ہے کہ کیسے دن میں جمائیاں آتی ہیں۔تحقیق کاروں کا کہنا ہے کہ موٹے افراد رات کو جتنی مرضی نیند لے لیں لیکن پھر بھی انہیں دن میں نیند آتی رہتی ہے جس کی وجہ ان کا بڑھتا ہوا وزن ہے۔ماہرین نے 1395مرد وخواتین کا مطالعہ کیا اور یہ بات سامنے آئی کہ جو لوگ رات کو دیر سے سوتے ہیں یا جن کی آنکھ آدھی را ت کو کھل جاتی ہے انہیں دن میں زیادہ جمائیاں آتی تھیں۔اسی طرح دن کے وقت نیند آنے کی وجہ سے انہیں دفتر میں نوکری کے مسائل بھی پیدا ہوئے جبکہ کار ایکسیڈینٹ کے مسائل بھی درپیش تھے۔ماہرین کا کہنا ہے کہ جو لوگ ذہنی تناوٗ کا شکار ہوتے ہیں انہیں نیند آنے میں بھی وقت لگتا ہے یا رات کے وقت ان کی نیند بری طرح متاثر ہوتی ہے جس سے دن میں نیند آتی ہے اور ساتھ ہی جمائیوں کی رفتار بھی بڑھ جاتی ہے۔