صحت

زیادہ وقت بیٹھ کر گزارنا دماغ کیلئے خطرناک

بوسٹن یونیورسٹی کی تحقیق میں بتایا گیا ہے کہ درمیانی عمر میں زیادہ وقت بیٹھ کر گزارنا بڑھاپے میں دماغ کے سکڑنے یا دماغی عمر میں تیزی سے اضافے کا خطرہ بڑھا دیتا ہے۔

تحقیق کے مطابق درمیانی عمر میں ناقص جسمانی فٹنس اگلے 20 برسوں میں دماغی حجم کو 20 فیصد تک کم کرسکتی ہے۔

تحقیق کے مطابق ناقص فٹنس اور دماغی حجم کے درمیان براہ تعلق موجود ہے جس سے دماغ کے قبل از بوڑھے ہونے عمل میں تیزی کا عندیہ ملتا ہے۔

اس تحقیق کے دوران 40 سال سے زائد عمر کے ڈیڑھ ہزار ایسے افراد کا جائزہ لیا گیا جو دماغی تنزلی یا امراض قلب سے محفوظ تھے اور ان کی جسمانی فٹنس کا ٹیسٹ لیا گیا۔بعد یہی جسمانی فٹنس ٹیسٹ 2 دہائیوں بعد ایم آرآئی اسکین کے ساتھ لیا۔نتائج سے معلوم ہوا جو افراد 20 سال جسمانی فٹنس کے حوالے سے دیگر سے پیچھے تھے ان کے دماغی حجم میں نمایاں کمی آئی ہے۔محققین کا کہنا ہے کہ ناقص جسمانی فٹنس کے حامل افراد اکثر ہائی بلڈ پریشر کے شکار اور ان کے دل کی دھڑکن بھی تیز ہوتی ہے۔یہ تحقیق امریکن اکیڈمی آف نیورولوجی میں شائع ہوئی۔

سگریٹ نوشی سے ذیابطیس کا خطرہ تین گنا زیادہ ہوتا ہے

لاس اینجلس : عالمی ادارہ صحت (WHO) نے کہا ہے کہ سگریٹ نوشوں کے ذیابطیس کا شکار ہونے کا خطرہ سگریٹ نہ پینے والوں کی نسبت تین گنا زیادہ ہوتا ہے۔

ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن کی حال میں جاری کردہ رپورٹ کے مطابق دنیا بھر میں سگریٹ نوشی سے 50 لاکھ لوگ موت کا شکار ہوتے ہیں اور سگریٹ نہ پینے والوں پر بھی سگریٹ کے دھویں سے منفی اثر پڑتا ہے۔

رپورٹ کے مطابق سگریٹ نوشی سے ناصرف دل کا عارضہ بلکہ ذیابطیس اور دیگر مہلک امراض کا خدشہ بھی بڑھ جاتا ہے۔

ماہرین صحت کا کہنا ہے کہ سگریٹ نوشی خون میں شگر کی سطح کو خطرناک حد تک بڑھا دیتی ہے، کہا جا رہا تھا کہ الیکٹرانک سگریٹ تمباکو نوشی کا صحت مند متبادل ہے لیکن ماہرین یہ بات ابھی تک ثابت کرنے سے قاصر رہے ہیں۔

ایسا مشروب جو جسم کی تمام اضافی چربی کو پگھلا دے

اسلام آباد
اگر ایسا مشروب مل جائے جو نہ صرف پیاس بجھائے بلکہ آپ کے جسم کی تمام اضافی چربی کو پگھلا دے تو یقیناًآپ ضرور یہ مشروب پئیں گے۔آج ہم آپ کو ایک ایسا مشروب بتائیں گے جو رات کو سونے سے پہلے پینے سے آپ کے جسم کی تمام اضافی چربی ختم ہوجائے گی اور آپ کا پیٹ اور تمام اعضائ بھدی چربی سے پاک ہوجائیں گے۔رات کو جب ہم سوتے ہیں تو ہمارا میٹابولزم اپنا کام شروع کردیتا ہے اور اگر ایسے میں یہ مشروب پیا جائے تو میٹابولزم کی کارکردگی مزید تیز ہوجاتی ہے اور ہمارا وزن تیزی سے کم ہونے لگتا ہے۔ اگر آپ اپنے پیٹ کی چربی سے نجات حاصل کرنا چاہتے ہیں تو مندرجہ ذیل سپزیوں کا استمال کریں

کھیرے کا استعمال

کھیرے کا استعمالباقاعدگی سے کریں۔کھیرے میں موجود پانی اور فائبر کی مقدار ہمارے معدے کو تروتازہ کرنے کے ساتھ وزن میں کمی میں اہم کردار ادا کرتی ہے۔

لیموں

۔اسی طرح لیموں بھی ان سبزیوں میں سے ایک ہے جو ہماری جلد اور دیگر چیزوں کے لئے بہت فائدہ مند ہے۔

ادرک

اسی طرح ادرک میں یہ خاصیت موجود ہے کہ یہ جسم سے بادی کو ختم کرتا ہے اور ہمارے معدے کو بہتر بنانے میں اہم کردار ادا کرتا ہے۔

شیمپو کے حیرت انگیز کمالات

شیمپو کے حیرت انگیز کمالات  درجہ زیل میں بیان کیے گئے ہیں اکثر لوگ اس کے بارے میں نہیں جانتے

سکڑ جانے والے سویٹر کو دوبارہ ٹھیک کرے

اگر آپ کا پسندیدہ سویٹر سکڑ جائے تو پریشان نہ ہو آپ اسے دوبارہ اصل سائز میں واپس لاسکتے ہیں بس بے بی شیمپو اور گرم پانی کا استعمال کرنا ہوگا۔ سنک کو گرم پانی سے بھریں اور اس میں کچھ مقدار میں بے بی شیمپو ڈالیں اور ہاتھ سے ملالیں۔ اب سویٹر کو پانی میں ڈال دیں اور پندرہ منٹ تک بھگوئے رکھیں۔ اب سویٹر کو نچوڑے بغیر نکالیں اور کسی کنٹینر میں رکھ دیں، اب سنک کو صاف پانی سے بھریں اور سویٹر کو اس میں کچھ دیر کے لیے بھگوئے رکھیں۔ اب سویٹر کو نکال کر ایک تولیے پر رکھیں اور تولیہ اس پر پھیر کر پانی نکالیں۔ اس کے بعد سویٹر کو کسی سپاٹ سطح پر ایک خشک تولیے پر رکھیں اور نرمی سے اسے کھینچیں۔ جب وہ خشک ہوجائے تو اسے مزید کھینچیں اور بس۔

لیدر کے جوتوں اور پرس کو نئی زندگی دیں

اپنے چمڑے یا لیدر کے جوتوں اور پرس کی نئی زندگی کے لیے مہنگے سلوشنز خریدنے کی ضرورت نہیں۔ کچھ مقدار میں شیمپو اور ایک صاف کپڑا یہ کام کرسکتے ہیں۔ شیمپو کو جوتوں کے خراب حصوں پر لگا کر کپڑے سے رگڑیں تو اس کی صفائی کے ساتھ ساتھ اس کی رنگت میں بھی نئی جان آجائے گی۔ یہ آپ کے جوتوں کو نمک کے داغوں سے بھی تحفظ دے گا۔

منجمد زپ کو ٹھیک کریں

اگر تو آپ کی زپ کسی جگہ پھنس گئی ہے تو اس پر زور لگا توڑنے کی بجائے تھوڑا سا شیمپو روئی پر لگائیں اور زپ پر پھیریں۔ شیمپو زپ کو آسانی سے حرکت دینے میں مددگار ثابت ہوگا اور باقی پھنس جانے والے کچرا اگلی دھلائی میں نکل آئے گا۔

گاڑی کی صفائی

شیمپو میں چکنائی کاٹنے کی طاقت گاڑی پر بھی کام کرتی ہے۔ ایک چوتھائی کپ شیمپو کو پانی کی ایک بالٹی میں ملائیں اور اسفنج سے گاڑی کو صاف کرلیں۔

ضدی نٹ بولٹس کو حرکت دیں

اگر کبھی کوئی نٹ اور بولٹ الگ نہیں ہورہا ہو تو اس پر شیمپو کی کچھ مقدار گرا کر کوشش کریں۔ شیمپو کو کچھ دیر تک جذب ہونے دیں اور اس کے بعد دیکھیں کہ نٹ اور بولٹ کیسے کھلتے ہیں۔

بینڈیج کو بغیر درد کے ہٹائے

عام طور پر کسی زخم سے بینڈیج کو ہٹانا کافی تکلیف دہ عمل ثابت ہوتا ہے، تاہم کچھ مقدار میں شیمپو کو بینڈیج کے اوپر اور ارگرد ملنے کے بعد کچھ دیر جذب ہونے کا انتظار کریں اور پھر بینڈیج کو اتار لیں آپ کو ذرا بھی تکلیف نہیں ہوگی۔

پیروں میں نئی جان ڈالے

اپنے پیروں میں رات کو سوتے وقت شیمپو کی کچھ مقدار سے مالش کریں اور کاٹن کی جرابیں چڑھا لیں۔ صبح جب آپ اٹھیں گے تو پیر ہموار اور ریشمی محسوس ہوں گے۔

دیواروں سے ہیئر اسپرے کی صفائی

اگر تو ہیئر اسپرے آپ کے باتھ روم کی دیواروں پر جم گیا ہے یا کسی بچے نے اسے دیواروں پر کردیا ہے تو شیمپو کی کچھ مقدار کو گیلے اسفنج پر ڈالیں اور گندی جگہ کو صاف کرلیں۔

شیونگ کریم کا متبادل

اگر تو شیونگ کریم ختم ہوگئی ہو اور گھر سے باہر نکلنے کا دل نہ کر رہا ہو تو صابن کو استعمال نہ کریں بلکہ شیمپو کو ترجیح دیں کیونکہ جلد میں نرمی لانے کے حوالے سے وہ زیادہ بہتر متبادل ہے۔

گندے ہاتھوں کو صاف کریں

صابن کے مقابلے میں کچھ شیمپو ضدی میل یا نہ ہٹنے والے نشانات کو ہاتھوں سے صاف کرنے میں جادوئی کمال دکھاتے ہیں۔ شیمپو واٹر پینٹ کے داغ مٹانے میں بھی مددگار ثابت ہوتا ہے۔

پانی کے نل اور ٹب کو چمکائیں

مہمانوں کی آمد سے قبل ٹب اور نلکوں کو فوری طور پر جگمگانا چاہتے ہیں؟ تو شیمپو کا انتخاب کریں کیونکہ یہ زبردست کام کرتا ہے۔

کنگھوں اور برشز کی صفائی

چکنی جلد آپ کے کنگھوں اور برشز کو توقعات سے زیادہ تیزی سے بھردیتی ہے اور اگر آپ انہیں پرس یا جیب میں رکھتے ہیں تو ان میں مٹی اور گند بھی جمع ہوجاتا ہے۔ انہیں ایک بار پھر نیا بنانے کے لیے شیمپو کا استعمال کریں، پہلے تو اس میں پھنسے بالوں کو نکالیں اور پھر شیمپو کی کچھ مقدار کو اس پر رگڑیں۔ اس کے بعد کسی گلاس میں پانی بھر کر اس میں کچھ مقدار میں شیمپو ملائیں اور کنگھی یا برش کو کچھ منٹ کے لیے اس میں ڈال دیں اور پھر دھو کر صاف کرلیں۔

نازک اشیاءکی صفائی

شیمپو نازک اشیاءکی صفائی کے لیے بھی بہترین ہے۔ ان پر اس کا ایک قطرہ گرائیں اور صاف کرلیں۔

 

جو کا استمال متعدد جان لیوا امراض سے نجات

جو کے استمالسے متعدد جان لیوا امراض سے نجات پایا جا سکتا ہے

لیونڈ یونیورسٹی کی تحقیق میں بتایا گیا ہے کہ جو کا استعمال لوگوں کی صحت کو تیزی سے بہتر کرتا ہے اور بلڈ شوگر لیول کو کم کرکے ذیابیطس کا خطرہ کم کردیتا ہے۔

تحقیق کے مطابق جو میں پائے جانے والے خصوصی فائبر طبی لحاظ سے صحت کے لیے بہت مفید ہے اور اس کا دلیہ لوگوں کی خوراک کی اشتہا کم کرنے میں مددگار ثابت ہوتا ہے۔

تحقیق میں مزید بتایا گیا ہے کہ غذائی فائبر کا درست انتخاب مختصر مدد میں حیرت انگیز طبی فوائد کا باعث بنتا ہے۔

تحقیق کے دوران رضاکاروں کو ناشتے، دوپہر اور رات کے کھانے میں روزانہ جو سے تیار کردہ روٹی کھلائی گئی اور پھر ان کے اندر ذیابیطس اور خون کی شریانوں کے امراض کے خطرے کا تعین کیا گیا۔

محققین کے مطابق رضاکاروں کے میٹابولزم میں بہتری دیکھی گئی جس کے نتیجے میں بلڈشوگر اور انسولین کا لیول کم ہوا جبکہ انسولین کی حساسیت بڑھ گئی۔

ان کا کہنا تھا کہ جو کے کھانے سے معدے میں موجود صحت کے لیے اچھے بیکٹریا زیادہ سرگرم ہوگئے اور جسم میں اہم ہارمونز کا اخراج ہوا۔

اسکے علاوہ جو کا استعمال جسمانی وزن میں کمی کے ساتھ امراض قلب اور ذیابیطس جیسے جان لیوا امراض کا خطرہ بھی کم کرتا ہے۔

اخروٹ کا استمال، جسمانی وزن میں کمی

کیلیفورنیا یونیورسٹی اور سان ڈیاگو اسکول آف میڈیسین کی مشترکہ تحقیق کے مطابق اخروٹ اور زیتون کے تیل سے بھرپور غذا جسمانی وزن میں کمی کے لیے بہترین ثابت ہوتی ہے۔

اس کے ساتھ ساتھ اخروٹ میں ایسے اجزاءبھی موجود ہیں جو کولیسٹرول لیول کو کم رکھنے میں بھی مدد فراہم کرتے ہیں۔

محققین نے نتائج کو حیران قرار دیتے ہوئے کہا کہ روزانہ کچھ مقدار میں اخروٹ کا استعمال موٹاپے سے بچاﺅ کے لیے مفید ثابت ہوتا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ اگرچہ اخروٹ میں چربی کی مقدار کافی ہوتی ہے مگر اس کا استعمال جسمانی وزن میں کمی کے لیے اسی طرح فائدہ مند ثابت ہوتا ہے جیسے کم چربی والی غذا۔

اس تحقیق کے دوران 22 سے 72 سال کے 245 موٹاپے کے شکار مرد و خواتین کا جائزہ ایک سال تک لیا گیا اور 3 غذاﺅں کے ذریعے انہیں گروپس میں تقسیم کرکے ان کے جسمانی وزن پر مرتب ہونے والے اثرات کو دیکھا گیا۔

6 ماہ بعد معلوم ہوا کہ جن خواتین نے اخروٹ سے بھرپور غذا کا استعمال کیا ان میں دیگر گروپس کے مقابلے میں جسمانی وزن میں زیادہ کمی دیکھی گئی جبکہ ان کا کولیسٹرول لیول بھی کم ہوا۔

 

ورزش سے ہارٹ اٹیک کے چانسز کم ہوجاتے ہیں

طبی تحقیق میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ جو افراد ورزش کرنا شروع کر دیتے ہیں ان میں ہارٹ اٹیک کے بعد زیادہ دیر تک زندہ رہنے کے چانس بڑھ جاتے ہیں۔ غیر ملکی خبر رساں ادارے میں چھپنے والی ایک رپورٹ کے مطابق طبی ماہرین کا کہنا ہے کہ باقاعدگی سے ورزش کرنے سے نہ صرف ہارٹ اٹیک ہونے کے چانسز کم ہو جاتے ہیں بلکہ اس سے زیادہ دیر تک صحت مند زندگی گزارنے کے آثار بھی نمایاں ہو جاتے ہیں۔ امریکی ریاست بالٹی مور کے ہینری فورڈ ہیلتھ سسٹم کے سائنسدانوں کے مطابق اس قسم کی سٹڈی پہلی دفعہ رپورٹ کی گئی ہے۔ سائنسدانوں نے اپنی اس تحقیق کیلئے 2 ہزار سے زائد ایسے افراد کو منتخب کیا جن کو پہلے ہارٹ اٹیک ہو چکا تھا۔ تحقیق سے ثابت ہوا کہ جن افراد نے باقاعدگی سے ورزش کو اپنا معمول بنا لیا تھا ان میں ہارٹ اٹیک ہونے کے چانسز کم ہو گئے تھے۔ سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ ہم سب جانتے ہیں کہ اچھی صحت کے حامل افراد عموما طویل عمر پاتے ہیں لیکن اب تازہ ترین تحقیق سے یہ بھی ثابت ہو چکا ہے کہ ورزش کا معمول انسان کو ہارٹ اٹیک کے خطرے سے بھی بچائے رکھتا ہے۔ اس تحقیق سے منسلک ڈاکٹر بالاہا کا کہنا ہے کہ صحت مند شخص کو بھی ہارٹ اٹیک ہو سکتا ہے لیکن اس سے موت ہونے کے چانسز کم ہو جاتے ہیں۔

شوگرکنٹرول کے چند گھریلو نسخے

دنیا بھر میں لوگوں کی اکثریت شوگر کی بیماری کا شکار ہے جب کہ شوگر صرف خود ایک بیماری نہیں بلکہ اس سے بلڈ پریشر، اندھا پن، گردے، دل کی بیماریاں، شریانوں کو نقصان اسٹروک اور کوما جیسی بیماریاں جنم لے سکتی ہیں لیکن چند گھریلو نسخے استعمال کر کے ذرا سی محنت اور توجہ سے گھر بیٹھے اس بیماری کو کنٹرول کیا جاسکتا ہے۔
قدرتی کچی غذائیں

چند قدرتی غذائیں ایسی ہیں جن کو اگر کچا کھایا جائے تو یہ شوگر کا بہترین علاج ہے ان غذاو¿ں میں پھل، جوسز، نٹس اور سبزیاں شامل ہیں جن میں قدرتی طورپر انزائم اور فائبر موجود ہوتا ہے جو جسم میں شوگر کو رفتہ رفتہ جذب کرتا ہےجس کے نتیجے میں بلڈ پریشر لیول متوازن رہتا ہے۔ سیب، آڑو، بیر، گاجر، لیموں اور اورنج میں حل پذیرفائبر بڑی مقدار میں موجود ہوتا ہے جو کہ بلڈ پریشر کے ساتھ کولیسٹرول لیول کو بھی متوازن رکھتا ہے۔

ناگ پھنی اور السی کے بیج

ناگ پھنی کا جوس خون کی شوگر کو کم کرتا اور انسولین کے لیول کو بڑھا دیتا ہے جب کہ السی کے بیج پوسٹ پینڈیل شوگر کے لیول کو 28 فیصد تک کم کردیتی ہے۔

ورزش

ورزش اور پیدل چلنے سے نہ صرف شوگر باآسانی کنٹرول کی جاسکتی ہے بلکہ اس کی شدت کو طویل عرصے تک روکا جا سکتا ہے۔ ورزش سے وزن کم کرنے میں بھی مدد ملتی ہے جب کہ یہ جسم میں انسولین کی حساسیت کو بڑھا دیتی جو ٹائپ 2 شوگر کی وجوہات کو ختم کرتی ہے جب کہ اس سے بلڈ پریشر بھی کنٹرول میں رہتا ہے۔
مراقبہ کے عمل سے

مراقبے کا عمل جسم میں انسولین کے خلاف مزاحمت کو کم کرتا ہے جب کہ کولیسٹرول اور ایڈری نا نائل نامی ہارمونز کو بڑھا دیتا ہے جو جسم سے انسولین اور گلوکوز کا لیول بڑھا جاتا ہے ان ہی ہارمونز کا استعمال کرتے ہوئے گلوکوز اور انسولین کو توازن میں رکھا جاتا ہے۔
تلسی کے پتے

ان پتوں میں خون میں شوگر کو کنٹرول کرنے کی بھر پور صلاحیت ہوتی ہے کیوں کہ ان پتوں میں اینٹی آکسیڈینٹس موجود ہوتا ہے جوآکسی ڈیٹیو اسٹریس لیول کو کم کرتا ہے جو کہ شوگر کا باعث بنتا ہے۔

بلبیری کے پتے اور دارچینی

بالبیری کے پتے شوگر کو لیول کم کرنے کے لیے دنیا بھر میں مشہور ہیں جب کہ مسلسل ایک ماہ تک دار چینی کا استعمال بھی خون میں شوگر کو قابو میں مدد کرتا ہے۔
سبز چائے کا استعمال

سبز چائے کے پتوں میں فائبر موجود ہوتا ہے جو کھانے کے ٹوٹنے کے عمل کو آہستہ کردیتا ہے جو شوگر کو کنٹرول کرنے میں اہم کردار ادا کرتا ہے۔
اسپغول کے ذریعے

اسپغول کوعام طور پر قبض کشا سمجھاجاتا ہے اور جب اسے پانی میں حل کیا جاتا ہے تو پھول کر جیلی کی شکل اختیار کرلیتا ہے جو گلوکوز کے جذب ہونے کے عمل کو آہستہ کردیتا ہے جب کہ اسپغول شوگر میں استعمال ہونے وال ڈرگ میٹفورمن کے مضر اثرات کو بھی ختم کرتا ہے۔
مالش کے ذریعے

مالش جسم میں موجود انسولین پیدا کرنے والے خلیوں کو بڑھاتی ہے جب کہ مالش سے پینکریاز اور ہارمونیل سسٹم کے لیے بھی فائدہ مند ہوتا ہے۔
کریلے کے چھلکے اور لوکی

ان میں انسولین پولی پیپ ٹائیڈ پی بناتے ہیں جو شوگر کو کنٹرول کرنے میں بے حد مفید ہیں۔ لوکی سے چائے، کئی ڈشز سالن اور سوپ بھی بنایا جا سکتا ہے۔
نیم کے تازہ کونپلیں

نیم کے تازہ پتوں کے جوس کو نہار منہ استعمال سے شوگر کو کنٹرول کرنے میں مدد ملتی ہے۔
بنولہ کے بیج

بنولہ کے بیج میں قدرتی طور پر اینٹی آکسیڈینٹس بوریج تیل موجود ہوتا ہے جو خون میں موجود شوگر کے لیول کو کم کرنے میں مدد گار ہوتا ہے۔

Google Analytics Alternative