- الإعلانات -

الیکشن ہارتے ہیں تو بیویاں بھی…عمران خان

پشاور: الیکشن ہارتے ہیں تو بیویاں بھی ۔۔۔ عمران خان کے صبرکا پیمانہ لبریز،بڑی بات کرگئے، پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کہتے ہیں کہ جب سیاستدان الیکشن ہارتے ہیں تو ان کی بیویاں بھی بدل جاتی ہیں اور لوگوں کو زخموں پر نمک چھڑکنے میں مزہ آتا ہے۔پشاور یونیورسٹی میں طلبہ سے خطاب کے دوران عمران خان نے کہا کہ ملک میں جمہوریت کے لئے دھرنا ضروری تھا۔ انسان دنیا میں عدل و انصاف کے نظام کے قیام کے لئے آئے ہیں، انسان میں انسانیت نہ ہو تو وہ عقل مند جانور ہوجاتا ہے، افسوس ہے کہ ہمیں کہاں کھڑا ہونا تھا اور ہم کہاں کھڑے ہیں۔ میٹرو ٹرین پر پیسہ لگانے سے قومیں نہیں بنتی، ایشین ٹائیگر بننے سے پہلے انسانوں پر پیسہ لگانا ضروری ہے، انسانوں پر دولت خرچ کرنے سے قومیں بنتیں ہیں، قوموں پر پیسا لگائیں وہ خود اورنج لائن منصوبے چلا لیں گے۔ خیبرپختونخوا نے سب سے زیادہ پیسہ تعلیم پر لگایا، تعلیم پر بجٹ مزید بڑھائیں گے۔عمران خان نے کہا کہ وزیراعظم نواز شریف کو کرکٹ کپتان بننا چاہئے تھا غلطی سے وزیراعظم بن گئے،انہوں نے کبھی یہ نہیں سوچا کہ وہ پاکستان کے علاوہ کسی اور ملک میں رہیں گے، اسی لیے ان کی تمام دولت پاکستان میں ہی ہے۔ یہ سب لوگ ان کے مداح تھے، انہیں کوئی ضرورت نہیں کہ کرپٹ اور بےشرم لوگوں کو برا بھلا کہیں اور پھر ان کی گالیاں بھی سنیں۔ جب سیاستدان الیکشن ہارتے ہیں تو ان کی بیویاں بھی بدل جاتی ہیں اور لوگوں کو زخموں پر نمک چھڑکنے میں مزہ آتا ہے۔چیئرمین تحریک انصاف کا کہنا تھا کہ یہ ضروری نہیں کہ بڑا لیڈر پیسے والا بھی ہو، لیڈر بننے کیلئے بڑی سوچ رکھنا ضروری ہے، جتنا بڑا خواب اتنا بڑا انسان ہوتا ہے، لیڈر کو پہلے اپنی انا اور ضد ختم کرنا پڑتی ہے، جو لیڈر ’میں‘ پر فیصلے کرتا اور صرف اپنا سوچتا ہے دنیا اسے یاد نہیں کرتی۔