- الإعلانات -

لینڈ ریکارڈ کے نظام میں غلطی کی گنجائش نہیں ہے”شہباز شریف”

لاہور : وزیر اعلی پنجاب شہباز شریف نے کہا ہے کہ مارشل لاءمیں کروڑوں روپے کرپشن میں ڈوب گئے مگر بتایا جائے کہ نیب نے کیا کارروائی کی، ہماری دم پر پاﺅں نہیں آیا، نیب کو آزادی کیساتھ کام کرنے دیا جائے گا،پنجاب میں نیب کی تحقیقات جاری ہیں ، کئی ماہ سے پنجاب میں کام کر رہی ہے،پٹواری مافیا ناقابل قبول ہے، عوام کی جان اس مافیا سے چھڑوا دی ہے، لینڈ ریکارڈ کے نظام میں غلطی کی گنجائش نہیں ہے، لینڈ ریکارڈ نظام کو اس قدر شفاف بنائیں گے کہ کوئی انگلی نہ اٹھا سکے ۔وہ ہفتہ کو یہاں اراضی ریکارڈ کمپوٹرائز ڈکرنے کی تقریب سے خطاب کررہے تھے۔وزیر اعلی پنجاب شہباز شریف نے کہا کہ پنجاب میں اراضی ریکارڈ کمپیوٹرائزڈ کرنے کے حوالے سے آج کا دن تاریخ ساز ہے، پنجاب میں لینڈ ریکارڈ کے کام کا آغاز سب سے پہلے وزیراعظم نواز شریف نے کیا، ماضی میں لینڈز ریکارڈ منصوبے پر ایک ارب روپے خرچ کئے جائیں گے جو ضائع ہو گئے، احتسابی عمل کسی بھی معاشرے کا لازمی جزو ہوتا ہے، غلطیاں ہوتی ہیں مگر بدنیتی پر مبنی غلطی کی گنجائش کسی کیلئے نہیں ہو گی، اس کے باوجود وہ نظام کو اس قدر شفاف بنائیں گے کہ کوئی انگلی نہ اٹھا سکے اورپٹواری مافیا سے نیب کی جان چھڑائیں گے، پنجاب کے منصوبوں میں کرپشن ختم نہیں ہوئی مگر کرپشن کا عنصر بہت کم ہے۔وزیر اعلی نے کہا کہ پرویز الٰہی کے دور میں لینڈ ریکارڈ کمپیوٹرائزڈ کرنے کے نام پر 90 کروڑ روپے ضائع کئے، مفروضوں پر بات نہ کی جائے ،3 اداروں میں ایک دھیلے کی کرپشن ثابت ہو جائے تو سیاست چھوڑ دوںگا ،نیب کے بارے میں طرح طرح کی باتیں ہو رہی ہیں مگر نیب کے بارے میں کسی اور دن ثبوت کیساتھ بات کریں گے کہ نیب کیا کر رہی ہے تونیب کے پسینے چھوٹ جائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ 143تحصیلوں میں اراضی کے ریکارڈ سنٹر سے خدمات کی فراہمی آج سے شروع ہو گی۔ انہوںنے کہا کہ نیب گزشتہ کئی ماہ سے پنجاب میں مختلف معاملات کی تحقیق کر رہی ہے، پنجاب حکومت نے نیب کے ساتھ تحقیقات میں مکمل تعاون کیا ہے، لینڈ ریکارڈ میں ضائع ہونے والے ایک روپیہ کا بھی حساب نہیں لیا گیا، اس حوالے سے حقائق قوم کے سامنے لاﺅں گا۔ انہوں نے کہا کہ پوچھتا چاہتا ہوں کہ اربوں روپے کے سکینڈلز میں کیا کارروائی ہوئی۔ انہوں نے کہا کہ فخر سے کہتا ہوں کہ احتسابی عمل کو توانا کیا، پٹواری مافیا ناقابل قبول ہے، عوام کی جان اس مافیا سے چھڑوا دی ہے، لینڈ ریکارڈ کے نظام میں غلطی کی گنجائش نہیں ہے، لینڈ ریکارڈ نظام کو شفافیت اور پائیدار بنائیں گے.