- الإعلانات -

پچ سازگار نہیں مولانا فضل الرحمان چھکا لگانے کے چکر میں آؤٹ نہ ہوجائیں، فردوس عاشق

اسلام آباد: معاون خصوصی فردوس عاشق اعوان کا کہنا ہے کہ مولانا فضل الرحمان کی ہارڈ ہٹنگ جاری ہے اور وہ چاہتے ہیں کہ ہر بال پر چھکا لگائیں لیکن اس میں آؤٹ ہونے کے زیادہ چانسز ہیں۔

اسلام آباد ہائی کورٹ کے باہر میڈیا سے بات کرتے ہوئے فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ چیف جسٹس اسلام آباد ہائی کورٹ کے حکم پر عدالتوں کا دورہ کیا، وزیراعظم نے انصاف کی فراہمی کے لئے 23 سال جدوجہد کی، حکومت نے اصلاحاتی ایجنڈے کے تحت قوانین میں 8 ترامیم کی ہیں، عمران خان نے گلے سڑے نظام کو بدلنے کا وعدہ کیا تھا، نظام کو بدلنے کا آغاز ہو چکا ہے۔ حکومت قوانین میں تبدیلی کرکے اصلاحات کے عمل کو آگے بڑھا رہی ہے، نظام بدلنے کی پہلی اینٹ قوانین میں تبدیلی ہے۔ سینیٹ میں اکثریت نہ ہونے کی وجہ سے اسلام آباد ہائی کورٹ میں ججز کی تعیناتی کابل پاس نہیں ہوا۔

توہین عدالت نوٹس سے متعلق معاون خصوصی نے کہا کہ عدالت نے ان کی غیر شروط معافی کو مسترد نہیں کیا بلکہ 11 نومبر تک تحریری جواب جمع کرانے کا حکم دیا ہے۔ فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ سیاست دان میدان میں رہ کر سیاست کرتا ہے، ہارجیت ہوتی رہتی ہے مگر سیاست دان میدان میں رہتا ہے، مولانا فضل الرحمان کی ہارڈ ہٹنگ جاری ہے، وہ چاہتے ہیں کہ ہر بال پر چھکا لگائیں، اس میں آؤٹ ہونے کے زیادہ چانسز ہیں،  کچھ گیندوں کو روک کر کھیلنا ہی سمجھ داری ہے، پچ ہموار نہیں، مولانا صاحب کو مدمقابل باؤلر کو بھی مدنظر رکھنا چاہیے۔ ہارڈ ہٹنگ کا جواب ہارڈ ہٹنگ سے نہیں دیا جائے گا۔

معاون خصوصی کا کہنا تھا کہ  مولانا فضل الرحمان کامیدان میں آنے کا وقت مناسب نہیں ہے، امید ہے کہ مولانا فضل الرحمان موسم، پچ، حالات اور بولر کو دیکھ کر فیصلہ کریں گے، وہ ریٹائرڈ ہرٹ نہیں ہوں گے، مولانا صاحب ہر وقت وزیراعظم کو ہدیہ تبرک بھیجتے ہیں اس سے پیچھے ہٹیں، مولانا فضل الرحمان ایساعمل نہ کریں کہ سیاست سے باہر ہوجائیں اور انہیں فیس سیونگ کا موقع نہ ملے، امید ہے فضل الرحمان اپنا بیانیہ قومی مفاد کےخلاف نہیں کریں گے۔

کیا آرمی چیف کی توسیع کا نوٹیفکیشن جاری ہو چکا، صحافی کی جانب سے پوچھے جانے والے سوال پر معاون خصوصی نے کہا پتہ نہیں کیوں میڈیا میں ایشو بنایا جارہا ہے نوٹیفکیشن اسی وقت ہوجاتا ہے جب پراسس شروع ہوتا ہے۔