- الإعلانات -

شہباز تاثیر افغانستان میں داعش کے قبضے میں تھے نجی ٹی وی

اسلا م آباد:  نجی ٹی وی نے دعویٰ کیا ہے کہ سابق گورنر پنجاب سلمان تاثیر کے صاحبزادے شہباز تاثیر افغانستان میں داعش کے قبضے میں تھے،افغان طالبان نے بازیاب کروا کرکچلاک پہنچایا ۔نجی ٹی وی کے مطابق شہباز تاثیر کسی آپریشن میں بلکہ افغان صوبے زابل میں افغان طالبان کے داعش کیمپ پر حملے میں آزاد ہوئے ۔ افغان طالبان کمانڈر نے انھیں کچلاک پہنچایا ۔ کچلاک پہنچنے پر انٹیلی جنس ایجنسیاں حرکت میں آئیں اور شہباز تاثیر کو ہوٹل سے ٹریس کر کے کوئٹہ اور پھر لاہور منتقل کیا ۔ سینئر صحافی رحیم اللہ یوسفزئی کہتے ہیں اغوا کاروں نے شہباز تاثیر کو شمالی وزیرستان کے علاقے ڈانڈے درپہ خیل میں رکھا ۔ 4 ارب روپے تاوان اور کئی کمانڈروں کی رہائی کے مطالبات کئے تھے ۔ تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ سابق وزیر اعظم یوسف گیلانی کے صاحبزادے علی حیدر گیلانی اور شہباز تاثیر کے اغوا کا آپس میں کوئی تعلق نہیں ۔ ذرائع کے مطابق علی حیدر گیلانی کالعدم تحریک طالبان شہر یار گروپ کی تحویل میں ہیں ۔