- الإعلانات -

قبائیلی اضلاع میں بہترین ججز اور وکلا کو بھیجا جارہا ہے، چیف جسٹس پاکستان

اسلام آباد: جسٹس آصف سعید کھوسہ نے تقریب سے خطاب میں کہا ہے کہ قبائیلی اضلاع میں بہترین ججز اور وکلا کو بھیجا جا رہا ہے۔ ججز، وکلا اور عملے کی تربیت پر ہم توجہ دے رہے ہیں

چیف جسٹس آف پاکستان آصف سعید کھوسہ نے کہا ہے کہ قبائیلی اضلاع میں بہترین وکلا کو پریکٹس کیلئے جانا اور وکلا کو مختلف چیزوں پر کمانڈ ہونی چایئے، قبائیلی اضلاع میں بہترین ججز اور وکلا کو بھیجا جا رہا ہے۔ ججز، وکلا اور عملے کی تربیت پر ہم توجہ دے رہے ہیں۔ نئی چیزوں کے مشاہدے پر آپ بہت سی چیزیں  سیکھ سکتے ہیں،جسٹس نے مزید کہا ہے کہ ریسرچ پروگرام کی حوصلہ افزائی ہونی چاہیے، جو ملک کے لئے بہتر ہے۔

انہوں نے کہا ہے کہ تحقیقتی بنیاد پر جج مقدمے کے تمام پہلووں کا جائزہ لے سکتا ہے، دہشت گردی کی تاریخ ہزاروں سال پرانی اور دہشت گردی کی تعریف  پر سپرم کورٹ فیصلہ دے چُکی ہے۔انہعں نے مزید کہا ہے کہ کسی بھی معاشرےکے اقدارجانے بغیر اصلاحات بےمعنی ہوتے ہیں۔