- الإعلانات -

قیدیوں کو پے رول پر رہائی دینے کی تیاری، لیکن اطلاق کن قیدیوں پر ہوگا؟ حکومت نے اہم قدم اٹھا لیا

لاہور (ویب ڈیسک ) پنجاب اسمبلی نے قیدیوں کی فوری پے رول پر رہائی کا بل منظور کر لیا۔ بل قانون بننے کے بعد قیدیوں کو فوری پے رول کی سہولت میسر ہو سکے گی۔پے رول پر رہائی قید کے دوران بہتر رویہ رکھنے والے قیدیوں کو دی جائے گی۔ پے رول پر رہائی کے لیے بورڈ آف گورنرز کا قیام عمل میں لایا جائے گا۔ بورڈ کا سربراہ ڈائریکٹر جنرل ہوگا جس کی تعیناتی وزیر اعلٰی پنجاب کرینگے۔

بورڈ آف گورنرز پے رول پر رہائی دینے یا نہ دینے کا مجاز ہو گا۔بل کے تحت پے رول پر رہائی معمولی جرائم میں ملوث افراد کو دی جا سکے گی۔ 30 دن کے اندر بورڈ پے رول پر رہائی دینے یا نہ دینے کا فیصلہ کرے گا۔ پے رول پر رہائی سزائے موت، منشیات اور سنگین جرائم میں ملوث مجرموں کو نہیں دی جائے گی۔بل کے تحت بورڈ آف گورنرز جیل میں قید مجرم کے رویے کو مدنظر رکھیں گے۔ بورڈ آف گورنرز کو پے رول پر رہائی ختم کرنے کا بھی اختیار ہوگا۔