- الإعلانات -

پرویز مشرف کیخلاف غداری کیس کا تفصیلی فیصلہ جاری کردیا گیا

خصوصی عدالت کی جانب سے سابق صدر جنرل ریٹائرڈ پرویز مشرف کے خلاف سنگین غداری کیس میں سزائے موت کا تفصیلی فیصلہ جاری کردیا گیا ،خصوصی عدالت نے منگل کو سابق صدر جنرل ریٹائرڈ پرویز مشرف کو موت کی سزا دینے کا مختصر حکم سنایا تھا ،رجسٹرار خصوصی عدالت نے تفصیلی فیصلہ پرویز مشرف کے نمائندے کے حوالے کیا،تفصیلی فیصل169صفحات پر مشتمل ہے،سابق صدر کے نمائندے فیصلے کی کاپی لے کر عدالت سے روانہ ہو گئے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق عدالتی فیصلے میں کہا گیا ہے کہ سابق صدر کے خلاف آئین میں غیر قانونی ترامیم، بطور آرمی چیف آئین معطل کرنے اور غیر آئینی پی سی او جاری کر کے آئین شکنی کرنے کا جرم بھی ثابت ہوا ہے،عدالتی فیصلے کے مطابق جنرل ریٹائرڈ پرویز مشرف آرٹیکل 6 کے تحت مجرم قرار پائے۔سنگین غداری کیس کا تفصیلی فیصلہ 169صفحات پر مشتمل ہے ،فیصلے میں ایک جج کا اختلافی نوٹ بھی ہے،رجسٹرار خصوصی عدالت نے تفصیلی فیصلہ پرویز مشرف کے نمائندے کے حوالے کیا،سابق صدر کے نمائندے فیصلے کی کاپی لے کر عدالت سے روانہ ہو گئے،رجسٹرار خصوصی عدالت نے دیگر فریقین کو بھی فیصلے کی کاپی فراہم کردی۔

یاد رہے کہ عدالتی رجسٹرار نے کہا تھا کہ میڈیا کو فیصلے کی کاپی فراہم نہیں کی جائے گی ، صرف فریق کو ہی کاپی فراہم کی جاسکتی ہے۔