- الإعلانات -

پرویز مشرف کیخلاف تفصیلی فیصلہ ، فواد چوہدری نے ایک مرتبہ پھر بیان جاری کر دیا

خصوصی عدالت نے پرویز مشرف کے خلاف سنگین غداری کیس کا تفصیلی فیصلہ جاری کر دیاہے جس پر مختلف حلقوں سے رد عمل سامنے آ رہاہے جبکہ گزشتہ روز پاک فوج کی جانب سے بھی مختصر پریس کانفرس کی گئی تاہم اب وفاقی وزیر برائے سائنس و ٹیکنالوجی فواد چوہدری نے بھی موقف جاری کر دیاہے ۔

تفصیلات کے مطابق فواد چوہدری نے ٹویٹر پر بیان جاری کرتے ہوئے کہا کہ ”معاملہ پرویز مشرف کی ذات کا ہے ہی نہیں ، ایک خاص حکمت عملی کے ساتھ پاکستان فوج کو ٹارگٹ کیا گیا، پہلے لبیک دھرنا کیس میں فوج اور ISI کو ملوث کیا گیا، پھر آرمی چیف کے عہدے میں توسیع کو متنازع بنایا گیا اور اب ایک فوج کے مقبول سابق سربراہ کو بے عزت کیا گیا۔“

فواد چوہدری کا اپنے بیان میں کہناتھا کہ ”واقعات کا تسلسل عدالتی اور قانونی معاملہ نہیں رہا اس سے بڑہ کر ہے، اگر ملک میں فوج کے ادارے کو تقسیم یا کمزور کر دیا گیا تو پھر انارکی سے نہیں بچا جا سکتا، جنرل باجوہ اور موجودہ فوجی سیٹ اپ نے جمہوری اداروں کا ساتھ دیا ہے، لیکن اس حمائیت کو نادانی میں کمزوری نہیں سمجھنا چاہئے۔“