- الإعلانات -

سرکاری سطع پر گندم نہ خریدنے کی وجہ سے سرکاری گودام ویران ہوچکے ہیں

سندھ حکومت کی جانب سے گزشتہ دو سیزن سے سندھ کے آبادگاروں سے سرکاری سطع پر گندم کی خریداری نہ کرنے کی وجہ سے سرکاری گوداموں میں گندم نہ ہونے کی وجہ سے ضلع بھر کی فلور ملز اور چکی مالکان کو محکمہ فوڈز کی جانب سے سندھ کے دیگر اضلاع سے گندم لیکر دی جارہی ہے جبکہ گزشتہ دو سیزن میں ضلع سانگھڑ میں دو کروڑ سے زائد سو کلو گندم کی بوریاں کی پیدوار ہونے کے باوجود بھی سرکاری سطع پر گندم نہ خریدنے کی وجہ سے سرکاری گودام ویران ہوچکے ہیں جبکہ اس سیزن میں بھی ضلع سانگھڑ میں پانچ لاکھ ایکٹر پر گندم کی بوائی کی گی ہے بہتر موسم کی وجہ سے30من فی ایکڑ کے حساب سے پیدوار متوقع ہے مگر سرکاری سطع پر ابھی تک گندم کی خریداری کی پالیسی نہیں دی گی ہے اگر اس بار سندھ گورٹمنٹ نے مارکیٹ ریٹ کے مطابق ریٹ مقرر نہ کئے تو شاید سرکاری سطع پر ضلع بھر میں دفعہ 144نافذ کرکے آبادگاروں سے سرکار کو گندم خدیدنا پڑے ضروری ہے کہ اگر سندھ سرکار چاہتی ہے کہ سرکار کے گوداموں میں گندم موجود ہو تو ضروری ہے کہ سندھ سرکار مارکیٹ ریٹ کے مطابق سرکاری ریٹ کا اعلان کیا جائے