- الإعلانات -

قبائلیوں کا معاشی استحکام حکومت کی ترجیحات میں شامل ہے،(ن) لیگی مٹھائیاں تقسیم کرنے میں ہر بار جلدی کرجاتے ہیں زرتاج گل

 وزیرمملکت برائے موسمیاتی تبدیلی زرتاج گل نے کہاہے کہ قبائلیوں کا معاشی استحکام حکومت کی ترجیحات میں شامل ہے،(ن) لیگی مٹھائیاں تقسیم کرنے میں ہر بار جلدی کرجاتے ہیں، ٹرانسپیرنسی انٹرنیشنل کی وضاحت سے ہمارے خلاف پراپیگنڈا کرنے والے خاموش ہوگئے ہیں،اپنے حلقے کے عوام کے مسائل سے بخوبی آگاہ ہوں، وزارت موسمیاتی تبدیلی نے گرین انٹرپرینیورشپ پروگرام شروع کیا ہے جس کے ذریعے ہزاروں خواتین اور خواجہ سرائوں کی تربیت جائے گی تاکہ وہ ماحول دوست شاپنگ بیگز تیار کر کے اپنی آمدن میں پرکشش اضافہ کرسکیں۔”اے پی پی سے گفتگو ہوئے زرتاج گل نے کہا کہ قبائلی علاقوں کو قومی دھارے میں شامل کرنے کے لئے ایسے اقدامات ستر سال تک کسی حکومت نے نہیں کئے۔ آج تحریک انصاف کی حکومت کے بدولت یہ پاکستان کے پہلے علاقے ہیں جہاں ہر خاندان کو صحت کی وسیع سہولیات فراہم کی گئی ہیں۔انہوں نے کہا کہ ہمارے قبائلیوں کا معاشی استحکام حکومت کی ترجیح ہے اور مجھے خوشی ہے کہ عوام کا ہم پر اعتماد بحال ہے جو ہمشہ برقرار رہے گا۔انہوں نے کہا کہ (ن) لیگی مٹھائیاں تقسیم کرنے میں ہر بار جلدی کرجاتے ہیں اور ٹرانسپیرنسی انٹرنیشنل کی وضاحت سے ہمارے خلاف پراپیگنڈا کرنے والے خاموش ہوگئے ہیں۔ زرتاج گل نے کہا کہ اپنے حلقے این اے 191کے عوام کے مسائل سے بخوبی آگاہ ہوں۔اس مشکل وقت میں اپنے خصوصی فنڈ سے 23 دیہات کو بجلی فراہم کررہی ہوں،ا نشاء اللہ اپنے فیز ٹو کے فنڈ سے مزید 50 سے 60 دیہات کی بجلی فراہمی یقینی بناوں گی۔انہوں نے کہا کہ ہماری وزارت عوام میں موسمیاتی تبدیلیوں کے حوالے سے آگاہی کے ساتھ روز گار کے مواقع بھی فراہم کررہی ہے اور اس مقصد کے لئے گرین انٹرپرینیورشپ پروگرام شروع کیا ہے جس کے ذریعے ہزاروں خواتین اور خواجہ سرائوں کی تربیت جائے گی تاکہ وہ ماحول دوست شاپنگ بیگز تیار کر کے اپنی آمدن میں پرکشش اضافہ کرسکیںگے۔انہوں نے کہا کہ ہائوسنگ سوسائٹیز کو اس بات کا پابند کریں گے کہ وہ پارکس کیلئے مختص جگہ کو کسی اور مقصد کے لئے استعمال نہ کریں، پاکستان تحریک انصاف کی حکومت نے برسر اقتدار آنے کے بعد سب سے زیادہ توجہ بلاتفریق احتساب، ماحولیاتی آلودگی پر قابوپانے اور عوام کا معیارزندگی بلندکرنے کے لئے احساس پروگرام پر مرکوزکر رکھی ہے، حکومت مہنگائی پر قابو پانے کیلئے ہنگامی بنیادوں پر اقدامات کررہی ہے۔وزیر مملکت نے کہا کہ ملک میں سیلابی پانی کو محفوظ بنانے کے لئے وفاقی اور صوبائی حکومتوں کو بڑے منصوبوں پر کام کرنے کی ضرورت ہے اس مقصد کے لئے وزارت موسمیاتی تبدیلی نے ” ریچارج پاکستان” منصوبہ شروع کرنے جارہی ہے اور وزیر اعظم عمران خان نے اس منصوبہ کی سمری منظور کر چکے ہیں۔انہوںنے کہا کہ ریچارج پاکستان منصوبہ کے تحت سندھ اور بلوچستان میں موزوں مقامات پر بڑے تالاب تیار کئے جائیں گے جس سے نہ صرف زیر زمین پانی کی سطح بلند ہونے میں مدد ملے گی بلکہ فصلوں کی کاشت کے لئے میں بھی معاونت ہوگی