- الإعلانات -

ملک بھر کی 7 ملین غریب خواتین کو 2 ہزار روپے ماہانہ نقد مالی معاونت فراہم کی جائے گی

وزیراعظم عمران خان نے جمعہ کو نئے کفالت پروگرام کا اجراءکر دیا جس کے تحت ملک بھر کی سات ملین غریب خواتین کو 2 ہزار روپے ماہانہ نقد مالی معاونت فراہم کی جائے گی۔ وزارت سماجی تحفظ و تخفیف غربت کے ذرائع کے مطابق احساس کفالت پروگرام کے تحت تمام مستحقین کو وزیر اعظم کے ”راشن وظائف“ اور ”ون ویمن ون بینک اکاﺅنٹ“ وژن کے مطابق مخصوص اے ٹی ایمز اور بینک کی شاخوں کے ذریعے ادائیگیوں کی سہولت فراہم کی جائے گی۔ ہر مستحق خاتون کو اپنے سیونگ اکاﺅنٹ کی سہولت حاصل ہو گی۔ اس پروگرام کے اجراءسے خواتین کو مالی اور ڈیجیٹل نظام میں شمولیت کے مواقع حاصل ہوں گے۔ کفالت بی آئی ایس پی کے مالی معاونت کے پچھلے پروگرام سے بہت مختلف ہے۔ اس میں 10 سال بعد بنیادی تبدیلیاں کی گئی ہیں۔ مستحقین کی رجسٹریشن کے لیے سروے طریقہ کار کو تبدیل کیا گیا ہے۔ پہلا سروے دس سال پرانہ تھا اور ادائیگی کا نظام بھی دس سال پرانہ تھا، اب نیا ڈیجیٹل ادائیگی کا نظام لایا گیا ہے۔ مالی معاونت کی رقم میں بھی اضافہ کیا گیا ہے اور اسے افراطِ زر کی شرح سے منسلک کر دیا گیا ہے۔ شفافیت اور احساس وفاداری پالیسی پر عملدرآمد اس پروگرام کا اہم حصہ ہے۔ اس نظام کے اجراءسے لاکھوں غریب خواتین کی زندگیوں میں تبدیلی رونما ہو گی جو سابقہ نقد مالی معاونت کی سکیموں میں کسی نہ کسی طرح معاشی استحصال کا شکار ہوئیں اور مالی نظام سے باہر ہوئیں۔ اسٹیٹ آف دی آرٹ ٹیکنالوجی کے تحت اس بات کو یقینی بنایا جائے گا کہ خواتین نہ صرف پوری رقم وصول کریں گی بلکہ اپنے مستقبل کی بہتر منصوبہ بندی کرنے کے بھی قابل ہوں گی اور اپنے گھرانے سمیت غربت سے باہر نکل سکیں گی۔ ذرائع کے مطابق اس پروگرام کے تحت فروری 2020ءمیں 15 اضلاع میں ڈیسک رجسٹریشن ہو گی۔ ان اضلاع میں سجاول، بہاولپور، چکوال، چارسدہ، فیصل آباد، ہری پور، جیکب آباد، کیچ، قلعہ سیف اللہ، لکی مروت، لیہ، مہمند ایجنسی ، نصیر آباد، سکھر اور ٹھٹھہ شامل ہیں۔ اسی طرح 55 اضلاع میں گھر گھر سروے تقریباً مکمل ہو چکا ہے اور ان میں رجسٹریشن مارچ 2020ءمیں ہو گی