- الإعلانات -

کورونا وائرس سے نمٹنے کیلئے مستعد ہیں، تمام ہوائی اڈوں پر سکریننگ کے نظام کو یقینی بنا رہے ہیں ڈاکٹر ظفر مرزا

 وزیر اعظم کے معاون خصوصی برائے قومی صحت ڈاکٹر ظفر مرزا نے کہا ہے کہ کورونا وائرس سے نمٹنے کیلئے وفاق اور صوبے مستعد ہیں، تمام ہوائی اڈوں پر سکریننگ کے نظام کو یقینی بنا رہے ہیں، وزارت صحت میں قائم ایمرجنسی آپریشن سیل بھی صورتحال کو مانیٹر کر رہا ہے، ایمرجنسی کور کمیٹی تیزی سے بدلتی ہوئی صورتحال کی نگرانی کر رہی ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے جمعہ کو ایمرجنسی کورونا وائرس کی کور کمیٹی کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔ اجلاس میں سیکرٹری ہیلتھ، ایگزیکٹو ڈائریکٹر این آئی ایچ، پاک فوج کے نمائندے اور دیگر ارکان نے شرکت کی۔ اجلاس میں مختلف شعبوں سے وابستہ ماہرین نے کورونا وائرس کی تازہ ترین صورتحال اور اقدامات کا جائزہ لیا۔ اجلاس میں گفتگو کرتے ہوئے معاون خصوصی نے کہا کہ تمام ہوائی اڈوں پر ہیلتھ اسٹیبلشمنٹ کا تربیت یافتہ عملہ سکریننگ کے نظام کو یقینی بنا رہا ہے۔ وزارت صحت میں قائم ایمرجنسی آپریشن سیل بھی صورتحال کو مانیٹر کر رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ایمرجنسی کور کمیٹی تیزی سے بدلتی ہوئی صورتحال کی نگرانی کر رہی ہے۔ کورونا وائرس سے نمٹنے کیلئے وفاق اور صوبے مستعد ہیں۔ ڈاکٹر ظفرمرزا نے کہا کہ تمام صوبوں سے درخواست کی ہے کورونا وائرس کے ممکنہ کیسز کیلئے ہسپتال اور علیحدہ وارڈز مختص کئے گئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ایمرجنسی کور کمیٹی میں کیے جانے والے فیصلوں پر عملدرآمد ہنگامی بنیادوں پر یقینی بنایا جا رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعظم پاکستان کی ہدایت پر جنگی بنیادوں پر کورونا وائرس سے بچاو کیلئے اقدامات کر رہے ہیں۔ علاوہ ازیں وزارت صحت کے ذرائع کے مطابق کورونا وائرس سے بچاو کے لیے حکومت متعدد اقدامات کر رہی ہے جس کے تحت قومی ادارہ صحت نے معالجین کے لیے اہم اقدامات کی ہدایت کی ہے جس کے تحت علاج کرنے والے ڈاکٹرز اور اور پیرامیڈیکل سٹاف کو مطلوبہ لباس پہننے کی ہدایت کی ہے۔ قومی ادارہ صحت کے خصوصی لباس کی خریداری کے لیے متعلقہ کمپنیوں سے رابطے کیا گیا ہے، ذاتی تحفظ کے آلات ( پرسنل پروٹیکٹو ایکویپمنٹ )کم ترین ریٹ پر فروخت کرنے والوں سے خریدے جائیں گے۔ انہوں نے کہا کہذاتی تحفظ کے آلات، خطرناک اور جان لیوا امراض میں مبتلا مریضوں کے علاج کے لیے استعمال ہوں گے، خصوصی لباس کی خریداری کے بعد انہیں کورونا کا علاج کرنے والے ہسپتالوں کے حوالے کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ آئیسولیشن وارڈ کے لئے مختص کیا گیا سٹاف اس لباس کو پہنے بغیر مریض کے قریب نہیں جائے گا