- الإعلانات -

وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے صوبے میں چلنے والی 30 کمپنیوں کو بند کرنے کا فیصلہ کرلیا ہے۔

وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے صوبے میں چلنے والی 30 کمپنیوں کو بند کرنے کا فیصلہ کرلیا ہے۔وزیراعلیٰ نے سوشل میڈیا پر اپنے پیغام میں کہا کہ پنجاب میں کل 71 کمپنیاں قائم کی گئی تھیں، 30 کمپنیوں کو غیر ضروری ہونے کی وجہ سے بند کیا جا رہا ہے۔شہباز شریف دور میں مختلف محکمہ جات کے امور چلانے کے لئے کمپنیز تشکیل دی گئیں تھی،ان کمپنیز میں بیوروکریسی میں سے ہی افسران بھاری تنخواہوں پر بھرتی کئے گئے تھے لیکن تحقیقات کے بعد بہت سی کمپنیز میں بد انتظامی اور بد عنوانی پائی گئی تھی۔بزدار حکومت نے ان کمپنیز کے مستقبل کا فیصلہ کرنے کے لئے ڈاکٹر سلمان شاہ کی زیر صدارت کمیٹی بنائی تھی جس نے تمام معاملات کا جائزہ لینے کے بعد سفارشات مرتب کی تھیں۔ان سفارشات کی روشنی میں 71 میں سے 30 کمپنیز کو مکمل طور پر بند کرنے، 36 کو جاری رکھنے اور چار کے بارے میں ابھی فیصلہ نہیں کیا گیا۔عثمان بزدار نے کہا کہ کمپنیوں کو بند کرنے کا فیصلہ کارپوریٹ گورننس کے اصولوں کو مدنظر رکھتے ہوئے کیا گیا ہے۔ان کے مطابق پچھلے دور میں غیر ضروری کمپنیاں بنا کر پنجاب کے خزانے کو نقصان پہنچایا گیا، آج وہ لوگ معصوم شکل بنا کر گڈ گورننس کے دعویدار بنتے ہیں۔