- الإعلانات -

اتحادیوں کے ساتھ اب تک کے مذاکرات انتہائی کامیاب رہے ہیں اور ان کے ساتھ جو بھی وعدے کیے ہیں اور جو جائز مطالبات ہے ان کو ترجیحی بنیادوں پر حل کررہے ہیں پرویز خٹک

وزیر دفاع اور حکومتی مذاکراتی کمیٹی کے سربراہ پرویز خان خٹک نے کہا ہے کہ وزیر اعظم عمران خان نے اتحادیوں کیساتھ کیے گئے وعدوں کو جلد از جلد نمٹانے کی ہدایت کردی ہے،اس سلسلے میں کمیٹی میں شامل نئے ممبران کی موجودگی میں جمعرات کو اہم اجلاس طلب کرلیا گیاہے،اجلاس میں تمام اتحادی جماعتوں کے تحفظات دور کریں گے اور افہام وتفہیم سے مسائل حل کریں گے، برطانیہ کے بعد امریکہ نے بھی پاکستان کو پرامن قرار دے دیا ہے، پاکستان بہت جلد ایف اے ٹی ایف کے گرے لسٹ میں شامل ہوجائے گا جو عمران خان کی کامیاب خارجہ پالیسی کا مظہر ہے، حکومت کی اولین ترجیح معیشت کی بحالی، ڈالر کی اونچی اڑان کو نیچے لانے،عوام کے بنیادی مسائل کے حل پر ہے ،اس سے مہنگائی اور بے روزگاری پر قابوں پانے میں مدد ملے گی عوامی مشکلات کا وزیر اعظم کوادراک ہے، یہ ساری صورت حال ہمیں سابقہ حکمرانوں سے ورثے میں ملی ہے۔

 نوشہرہ کلاں میں جلسے سے خطاب کرتے ہوئے وزیر دفاع پرویز خٹک نے کہا کہ اتحادیوں کے ساتھ اب تک کے مذاکرات انتہائی کامیاب رہے ہیں اور ان کے ساتھ جو بھی وعدے کیے ہیں اور جو جائز مطالبات ہے ان کو ترجیحی بنیادوں پر حل کررہے ہیں، ق لیگ، ایم کیو ایم، بلوچستان نیشنل پارٹی منگل گروپ، گرینڈ ڈیموکریٹک الائنس کے ساتھ مسلسل رابطے میں ہے، نئی بنائی جانے والی کمیٹی کا اجلاس جمعر ات کو طلب کرلیا ہے، سب کو ساتھ لیکر چلیں گے،اب تک اللہ تعالی کے فضل کرم سے حکومت اتحادیوں اور اپوزیشن کے تعاون سے قانون سازی میں کافی پیش رفت ہوئی ہے، چیئرمین الیکشن کمیشن اور ممبران کی تعیناتی کا مسئلہ بھی خوش اسلوبی سے حل ہوچکا ہے،احتساب کے قانون میں ترمیم سمیت پارلیمنٹ میں پیش ہونے والے تمام قانونی بلز پر اپوزیشن کے ساتھ باہمی مشاورت کے ساتھ آگے بڑھ رہے ہیں اور ان کی بہتر تجاویز کو شامل کریں گے۔

پرویز خٹک نے کہا کہ وزیر اعظم عمران خان کی بہتر حکمت عملی کی وجہ پاکستان دنیا میں اہم حیثیت حاصل کرچکا ہے، پاکستان کو برطانیہ کے بعد امریکہ نے پر امن ملک قرار دے دیا ہے اور بہت جلدایف اے ٹی ایف  کی گرے لسٹ میں پاکستان کو شامل کیا جارہا ہے جو پاک فوج قانون نافذ کرنے والے اداروں اور حکومت اور عوام کی جیت ہے۔پرویز خٹک نے کہا کہ وزیر اعظم عمران خان پاکستان کو حقیقی معنوں میں ایشیاً ٹایگر بنانا چاہتے ہیں، حکومت کی ساری توجہ معیشت کی بحالی، روپے کی قدر کو بہتر کرنے اور ڈالر کو نیچے لانے پر ہے،ہمیں معلوم ہے کے بجلی گیس، اشیاء خوردونوش کی قیمتوں میں اضافہ ہوا مہنگائی اور بے روزگاری ہے لیکن حقیقت یہ ہے کہ پاکستان میں ٹیکس کوئی نہیں دیتا ،بڑے مگر مچھ ٹیکس چوری میں ملوث ہیں، کسی بھی ملک کی ترقی کار از ٹیکس کی ادائیگی پر ہوتا ہے، عوام ترقی چاہتی اور ٹیکس نہیں دیتی یہ کیسے ممکن ہے ؟۔