- الإعلانات -

حقیقت یہ ہے کہ حکومت اور وزارت مذہبی امور نے کسی چیز کا اضافہ نہیں کیا۔ سینیٹر فیصل جاوید

اتوار کو پاکستان تحریک انصاف کے رہنماء سینیٹر فیصل جاوید نے کہا کہ ایک پروگرام کے تحت حج مہنگا کرنے کا پروپیگنڈا کیا جا رہا ہے،حکومت اور وزارت مذہبی امور نے کسی چیز کا اضافہ نہیں کیا، نئے سعودی ٹیکس، حج ویزہ فیس اور ہیلتھ انشورنس کرائے میں اضافہ ناگزیر وجوہا ت ہیں۔اس سے قبل  ترجمان مذہبی امور نے بھی مہنگے حج اخراجات بارے خبروں کی تردیدکرتےہوئےکہاہےکہ ایسی خبروں میں کوئی صداقت نہیں،حج پالیسی 2020ء ابھی تک کابینہ میں پیش نہیں ہوئی،مناسب اخراجات اور بہترین سہولیات والی حج پالیسی تشکیل دی جائے گی۔

یاد رہے کہ سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے مذہبی امور کے اجلاس میں سیکرٹری وزارت مذہبی امور نے بتایا تھا کہ رواں سال ایک لاکھ 79 ہزار عازمین حج کی سعادت حاصل کریں گے جبکہ حج پیکج میں 1 لاکھ 15 ہزار کا اضافہ کیا گیا ہے،نارتھ ریجن کا حج پیکج 5 لاکھ 50 ہزار جبکہ ساؤتھ ریجن کا حج پیکج 5 لاکھ 45 ہزار روپے ہوگا،حج اخراجات میں اضافہ روپے کی قدر میں کمی اور ائیر لائنز کے کرایوں میں اضافے کی وجہ سے کیا گیا ہے۔حکومت کی جانب  سے حج اخراجات میں اضافے کی خبروں پر ملک بھر میں اس حوالے سے شدید تنقید کی جا رہی ہے جبکہ حال ہی میں مولانا ناصر مدنی کی ویڈیو تقریر نے بھی سوشل میڈیا پر دھوم  مچائی ہوئی ہے جس میں انہوں نےوزیر اعظم عمران خان سے  حج مہنگا کرنے کی بجائے اپنے  اخراجات پورے کرنے کے  لئے بنی گالہ کو فروخت کرنے کا مطالبہ کیا تھا ۔