- الإعلانات -

کوئی بھی پاکستانی یا چینی اس وقت تک چین نہیں چھوڑ سکتا جب تک ان کا معائنہ نہ کیا جائے سفیر یاﺅژنگ

 پاکستان میں تعینات چین کے سفیر یاﺅژنگ کا کہنا ہے کہ ووہان کے سوا چین کے دیگر شہروں سے پاکستانیوں کوواپس بھیجا جائے گا۔اسلام آباد میں معاون خصوصی برائے صحت ظفر مرزا نے چینی سفیر یاﺅژنگ کے ہمراہ پریس کانفرنس کے دوران کہا کہ ملک میں کورونا وائرس کا ایک بھی کیس نہیں، وائرس کے مشتبہ 7 لوگوں کے نمونے منفی آنا خوش آئند ہے، کورونا وائرس سے متعلق حکومت روزانہ کی بنیاد پر انتظامات کا جائزہ لیتی ہے، کوئی بھی پاکستانی یا چینی اس وقت تک چین نہیں چھوڑ سکتا جب تک ان کا معائنہ نہ کیا جائے،چین سے آنے والوں میں کوئی مشتبہ مسافر نہیں ملا، چین سے آنے والا کوئی مسافر ایسا نہیں جسے آبزرویشن کی ضرورت ہو۔

پریس کانفرنس کے دوران چینی سفیر یاﺅ ژنگ کا کہنا تھا کہ کورونا وائرس سے 371 افراد ہلاک ہو چکے ہیں، اس سے نمٹنے کے لیے ہر ممکن کوشش کررہے ہیں، چین میں تمام تقریبات منسوخ کر دی گئی ہیں، ہم عالمی ادارہ صحت اور دیگر حکام سے مسلسل رابطے میں ہیں۔ عالمی ادارہ صحت نے ہمارے اقدامات کو سراہا ہے، ہم پرامید ہیں اس وبا سے نمٹ لیں گے۔ ہم کرونا وائرس پر قابو پانے کی صلاحیت رکھتے ہیں، وائرس کی ویکسین بنانے کیلئے بھی تحقیق جاری ہے، کرونا وائرس میں مبتلا 500 سے زائد مریض صحت یاب ہوچکے ہیں، دنیا کو اپنے اقدامات سے آگاہ کررہے ہیں۔

یاﺅژنگ نے کہا کہ چین میں پاکستانیوں کی کثیر تعداد ہے اور چین میں پاکستانی شہریوں کو اپنا ہم وطن سمجھتے ہیں، ہم تمام پاکستانیوں کے ساتھ رابطے میں ہیں پاکستان کی حمایت کو سراہتے ہیں، ووہان کے علاوہ چین کے دیگر شہروں سے پاکستانیوں کوواپس بھیجا جائے گا۔