- الإعلانات -

آئی اے ای اے کے زیر اہتمام تیسری بین الاقوامی کانفرنس، وزارت خارجہ نے ”پاکستان کی جوہری سلامتی کے نظام“ کے عنوان سے کتابچہ شائع کردیا

 وزارت خارجہ نے بین الاقوامی جوہری توانائی ایجنسی (آئی اے ای اے) کے زیر اہتمام ویانا میں جوہری سلامتی کے موضوع پر منعقدہ تیسری بین الاقوامی کانفرنس (آئیکونز) میں ”پاکستان کی جوہری سلامتی کے نظام“ کے عنوان سے کتابچہ شائع کیا ہے۔ یہ اقدام پاکستان کی اس مشق کا حصہ ہے جس کے تحت جوہری سلامتی کو مزید مضبوط بنانے کے اقدامات کے بارے میں معلومات پیش کی جاتی ہیں اور اس امر کا اظہار کیا جاتا ہے کہ جوہری سلامتی کے معاملہ کو پاکستان میں کتنی زیادہ اہمیت حاصل ہے۔ اس کتابچے کو 10 سے 14 فروری 2020ءتک منعقد ہونے والی ”آئیکونز“ کے شرکاءمیں تقسیم کیا جا رہا ہے۔ پاکستان نے ایک جامع اور مو¿ثر نیشنل نیوکلیئر سکیورٹی نظام قائم کیا ہے جو بین الاقوامی معیار اور ہدایات کے مطابق ہے۔ یہ نظام مفصل قانون سازی اور ریگولیٹری فریم ورک پر مبنی ہے جو جوہری مادوں، تابکاری مواد منسلکہ سہولیات اور سرگرمیوں کی نگرانی کرتا ہے۔ اس کو مضبوط اداروں اور تنظیموں کی پشت بانی میسر ہے جو مو¿ثر عملدرآمد کےلئے مطلوبہ اتھارٹیز، وسائل اور تربیت یافتہ افرادی قوت سے لیس ہیں۔ ہمارے منسلکہ انسٹیٹیوٹس میں نیوکلیئر سکیورٹی پر ہمارے سینٹر آف ایکسیلنس جوہری سلامتی کے شعبہ میں بہترین طریقوں اور تربیت کی فراہمی کے بین الاقوامی مرکز میں تبدیل ہو گئے ہیں۔ اعلیٰ سطح کے مختلف حکام اور ماہرین نے پاکستان کے جوہری سلامتی انتظامات کو عالمی معیار کے مطابق تسلیم کیا ہے۔ یہ کتابچہ ”پاکستان کے جوہری سلامتی نظام“ پر دوسری اشاعت ہے۔ آئی اے ای اے کے زیر اہتمام جوہری سلامتی پر دوسری بین الاقوامی کانفرنس کے موقع پر پہلی بار ایک مختصر رسالہ شائع کیاگیا تھا