- الإعلانات -

اگر مجھے گرفتار کیاگیاتومیری بہن آصفہ بھٹو میری آواز بنیں گی بلاول بھٹو

راولپنڈی میں نیب کے سامنے پیش ہونے کے بعد میڈیا سے گفتگوکرتے ہوئے چیئرمین پیپلز پارٹی نے کہا ہے کہ نیب اور حکومت ان کے خلاف انتقامی کارروائی کررہی ہے۔مئی سے جنوری تک نیب کو میرے اوپر کوئی اعتراض نہیں لیکن جیسے ہی مہنگائی، بے روزگاری اور ملکی مسائل پر احتجاج کا اعلان کیا تواچانک نیب کومیں یادآگیا جس کے بعد سے نیب کی جانب سے بار بار ہراساں کیا جارہاہے۔

انہوں نے کہا کہ عدالت مجھے بے گناہ قرار دے چکی ہے۔چیف جسٹس پاکستان کہہ چکے ہیں کہ بلاول بے گناہ ہے۔ تین دفعہ میں نیب کو بھی جواب دے چکا ہوں۔ تاہم دوبارہ بلانے پر تحفظات کے باوجود پھر بھی میں پیش ہواہوں، لیکن سیاسی انتقام کے خلاف اپنی آواز ہمیشہ بلند کرتے رہیں گے۔

انہوں نے کہانیب کا کیا تک بنتا ہے کہ وہ مجھے بار بار بلائے اور سوالات کرے حالانکہ میں تمام سوالوں کا جواب دے چکا ہوں۔ بتاچکا ہوں کہ میں کسی بھی کاروبار سے باقاعدہ وابستہ ہوں ہی نہیں۔بہرحال ادارے غلط کریں یا صحیح ان کا احترام کرتے ہیں البتہ دباو کے باوجود پیچھے نہیں ہٹیں گے۔

انہوں نے کہاشہباز شریف کے پارلیمان میں موجود نہ ہونے سے ویسے ہی مسائل ہوتے جیسے لیڈر آف دی ہاوس کے نہ ہونے سے ہوتے ہیں ۔امید کرتاہوں اپوزیشن لیڈر جلد ملک میں ہوں گے