- الإعلانات -

انفارمیشن کمیشن کی سالانہ رپورٹ فروری کے آخری ہفتہ میں پارلیمنٹ میں پیش کردی جائے گی، وزیر مملکت برائے پارلیمانی امور علی محمد خان کا قومی اسمبلی میں جواب

 (اے پی پی) وزیر مملکت برائے پارلیمانی امور علی محمد خان نے کہا ہے کہ انفارمیشن کمیشن کی سالانہ رپورٹ تیار ہے’ فروری کے آخری ہفتہ میں پارلیمنٹ میں پیش کردی جائے گی۔ جمعرات کو قومی اسمبلی میں وقفہ سوالات کے دوران شگفتہ جمانی کے سوال کے جواب میں علی محمد خان نے بتایا کہ سوشل میڈیا اور الیکٹرانک میڈیا پر بعض اوقات لوگوں کی پگڑیاں اچھالی جارہی ہیں۔ لوگوں کی عزت سے کھیلا جاتا ہے اس حوالے سے انضباطی اقدامات کئے جارہے ہیں۔ ضمنی سوال پر انہوں نے کہا کہ نومبر 2018ء میں قائم انفارمیشن کمیشن نے ایکٹ ہذا کی مقتضیات کو پورا کرنے کے لئے تمام وفاقی محکموں کو کہا ہے۔ کمیشن کو شہریوں سے 300 سے زائد اپیلیں موصول ہوئیں اور 120 سے زائد کیسز میں سرکاری محکموں نے شہریوں کو مطلوبہ معلومات فراہم کی ہیں۔ باقی ماندہ کیس ایکٹ ہذا کی عملدرآمدگی کے مختلف مراحل پر ہیں۔ وزارت اطلاعات نے مارچ 2019ء سے عملہ ڈویژن کے ایم ایس ونگ کی جانب سے حسبہ ‘ سفارش کردہ آسامیوں کی منظوری کا کیس ارسال کیا ہے۔ فنانس ڈویژن کی جانب سے جواب کا ابھی انتظار ہے جونہی مطلوبہ انفارمیشن کمیشن کو فراہم کیا جائے گا تو یہ تمام وفاقی وزارتوں اور منسلک محکموں کی جانب سے شفاف انداز سے اظہار کی پیشرفت کی نگرانی کرے گا۔ انفارمیشن کمیشن کی سالانہ رپورٹ تیار ہے۔ فروری کے آخری ہفتہ میں پارلیمنٹ میں پیش کردی جائے گی