- الإعلانات -

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا افغان مہاجرین کے حوالے سے منعقدہ عالمی کانفرنس سے خطاب

 (اے پی پی) وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ پاکستان 40 سال سے 30 لاکھ افغان مہاجرین کی میزبانی کررہا ہے، پاکستان اور افغانستان کا تعلق مشترکہ مذہب، ثقافت اور اقدار پر قائم ہے، افغان مہاجرین کو اس سال عالمی کانفرنس سے بہت سی توقعات وابستہ ہیں، افغان مہاجرین کی وطن واپسی اور افغان معاشرے میں عالمی تعاون کی اشد ضرورت ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے پیر کو پاکستان میں40 سال سے مقیم افغان مہاجرین کے حوالے سے منعقدہ عالمی کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر وزیر اعظم عمران خان، اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل انتونیوگوتریس اور مہاجرین کے لئے اقوام متحدہ کے ہائی کمشنر فلپو گرینڈی سمیت اہم ملکی اور عالمی شخصیات موجود تھیں۔ انہوں نے کہا کہ پاکستا ن 40 سال سے 30 لاکھ رجسٹرد اور غیر رجسٹرڈ افغان مہاجرین کی میزبانی کررہا ہے، افغان مہاجرین کو عالمی کانفرنس سے بہت سی توقعات وابستہ ہیں، افغان مہاجرین کی وطن واپسی اور افغان معاشرے میں عالمی تعاون کی اشد ضرورت ہے، پاکستان لاکھوں افغان مہاجرین کو صحت تعلیم اور فنی تربیت کی سہولتیںفراہم مہیا کرتا آرہا ہے،10 لاکھ غیر رجسٹرڈ افغان مہاجرین کو رجسٹرڈ کیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ مہاجرین کی وطن واپسی کے لئے افغانستان میں پائیدار امن بنیادی شرط ہے اور افغان مہاجرین کی باعزت واپسی کیلئے تمام شرکتداروں کو اپنا کردار ادا کرنا چاہئے