- الإعلانات -

عوام حکومت کی پالیسیوں سے مطمئن ہیں، اپوزیشن اپنی ساکھ کی فکر کرے، ذخیرہ اندوزوں اور گراں فروشوں کے خلاف اداروں کو متحرک کیا گیا ہے، مافیاز کے پاﺅں اکھڑ رہے ہیں، ہمایوں اختر خان کی پارٹی رہنماﺅں کے وفد سے گفتگو

پاکستان تحریک انصاف کے سینئر مرکزی رہنما و سابق وفاقی وزیر ہمایوں اختر خان نے کہا ہے کہ عوام حکومت کی پالیسیوں سے مطمئن ہیں، انشا اللہ پانچ سال گزر جائیں گے اور بلاول بھٹو عوام کے ووٹوں سے آئی ہوئی حکومت کو گرانے میں بے بس ہی رہیں گے، اپوزیشن عوام کی بجائے اپنی ساکھ کی فکر کرے کیونکہ عوام حکومت کی پالیسیوں اور کارکردگی سے مطمئن ہیں، (ن) لیگ ، پیپلز پارٹی اور جے یو آئی تحریک کے نام پر ایک دوسرے کا کندھا استعمال کرنا چاہتی ہیں۔ ان خیالات کا اظہارا نہوں نے پارٹی دفتر میں پارٹی رہنماﺅں کے وفد اور صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم عمران خان عوام کو ریلیف دینے کے لئے دن میں دو سے تین بار اجلاس منعقد کر رہے ہیں اور حکومت اس مقصد کے حصول کے لئے عملی اقدامات کررہی ہے، ذخیرہ اندوزوں اور گراں فروشوں کے خلاف اداروں کو متحرک کیا گیا ہے، طلب رسد اور قیمتوں کے حوالے سے باقاعدہ میکنزم بنا رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ مافیاز کے پاﺅں اکھڑ رہے ہیں اور ان کی جانب سے آخری حربے کے طور پر مزاحمت جاری ہے لیکن انہیں ریاست کی طاقت سے قانون کے کٹہرے میں لائیں گے ۔ انہوں نے کہا کہ حکومت نے رمضان المبارک کے حوالے سے پیشگی اقدامات شروع کر دیئے ہیں اور عوام کو یوٹیلٹی سٹورزاور سستے رمضان بازاروں کے ذریعے ریلیف دینے کےلئے پیشگی منصوبہ بندی شروع کر دی گئی ہے ۔ انہوں نے مزید کہا کہ حکومت کی کامیابی کی وجہ سے مسلم لیگ اور پیپلز پارٹی بے بس ہیں اور ان کے بیانات سے اس کا واضح اظہار ہوتا ہے، بلاول بھٹو کہہ رہے ہیں کہ اگر اپوزیشن جماعتیں باہر نہ نکلیں تو آئندہ عام انتخابات میں عوام کی نظروں سے گر جائیں گی،حقیقت یہ ہے کہ کرپشن اور لوٹ مار کی وجہ سے دونوں جماعتیں پہلے ہی عوام کی نظروں سے گر چکی ہیں اور اب انہیں اپنی سیاسی بقاءکا چیلنج درپیش ہے ۔ ہمایوں اختر خان نے کہا کہ جہاں ہم سے غلطی ہو گی ہم اس کا بر ملا اعتراف کرتے ہوئے اسے درست کرنے کی کوشش کریں گے، وزیر اعظم عمران خان نے صرف ریاست مدینہ کی طرز پر نظام کا نعرہ نہیں لگایا بلکہ اس کی جانب عملی پیشرفت جاری ہے