- الإعلانات -

براہ راست 152 ہسپتالوں کو بھیج دیئے گئے ہیں، پی پی ایز کا بے دریغ استعمال ہو گا تو یقیناً اس کی قلت ہو گی ڈاکٹر ظفر مرزا

وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے صحت ڈاکٹر ظفر مرزا نے کہا ہے کہ پی پی ایز (حفاظتی سامان) براہ راست 152 ہسپتالوں کو بھیج دیئے گئے ہیں، پی پی ایز کا بے دریغ استعمال ہو گا تو یقیناً اس کی قلت ہو گی۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے پریس بریفنگ کے دوران کیا۔ انہوں نے کہا کہ بے احتیاطی نہیں کرنی چاہئے، ایسا نہ ہو کہ کورونا مریضوں کی تعداد بڑھ جائے، ہمیں ایک موقع ملا ہے احتیاط ہر صورت کرنی چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ طبی حفاظتی سامان سے متعلق ہدایات جاری کر دی ہیں، اس سلسلہ میں ایک ویڈیو پر کام ہو رہا ہے جس میں پی پی ایز کا استعمال بتایا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ یہ ویڈیو نیشنل کمانڈ اینڈ کنٹرول آپریشن سنٹر کی جانب سے جاری کی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان میں اب تک مریضوں میں 70 فیصد افراد کی عمر 50 سال سے کم لیکن اس کا ہر گز یہ مطلب نہیں کہ کم عمر افراد محفوظ ہیں، 65 فیصد افراد کی عمریں 21 سال اور 50 سال کے درمیان ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کورونا وائرس سے مکمل احتیاط رکھنی ہے، تمام مریضوں میں 78 فیصد مرد ہیں، اس بات کو بھی مدنظر رکھا جائے، اس کی بڑی وجہ یہ ہے کہ مرد گھروں سے باہر سرگرمیوں میں زیادہ مصروف ہوتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کورونا وائرس کی بیماری دوسری بیماریوں کی طرح ہی ہے اس سے متاثر مریض کو ہمیں عام مریضوں کی طرح دیکھنا چاہئے، یہ مریض ہماری ہمدردی کے مستحق ہیں۔ انہوں نے کہا کہ عالمی سطح پر 16 لاکھ سے زائد افراد اس بیماری سے متاثر ہوئے ہیں اور 95 ہزار اموات ہوئی ہیں جبکہ پاکستان میں اب تک 4 ہزار 601 افراد اس وائرس سے متاثر ہوئے ہیں اور 727 افراد صحت یاب ہوئے ہیں جبکہ پاکستان میں 67 افراد موت کا شکار ہوئے ہیں.