- الإعلانات -

احساس ایمرجنسی کیش پروگرام کے تحت ساٹھ گھنٹوں کے دوران 13.18 بلین روپے 1.098 ملین مستحق خاندانوں کو دیئے جا چکے ہیں

وزیر اعظم عمران خان کی خاص ہدایات کے تحت کورونا لاک ڈاؤن سے متاثرہ متوسط، دیہاڑی داراورغریب طبقہ کے مستحق خاندانوںکی مدد کیلئے احساس ایمرجنسی کیش پروگرام کے 9 اپریل کو آغاز سے اب تک ساٹھ گھنٹوں کے دوران 13.18 بلین روپے 1.098 ملین مستحق خاندانوں کو دیئے جا چکے ہیں، پروگرام سے مجموعی طور پرملک بھر میں ایک کروڑ بیس لاکھ خاندان مستفید ہوںگے، ادائیگوں کے دوران رقم کی ناجائز کٹوتی کرنے والے سندھ، جنوبی پنجاب اورخیبرپختونخواکے مختلف علاقوں سے 40 احساس کیش ریٹیلرز کو گرفتار بھی کیا گیا ہے۔ تخفیف غربت و سماجی تحفظ ڈویژن کی طرف سے ہفتہ کو ٹویٹر پرجاری تفصیلات کے مطابق پروگرام کے تحت گذشتہ ساٹھ گھنٹوں کے دوران 13.18 بلین روپے 1.098 ملین مستحق خاندانوں میں تقسیم کئے جا چکے ہیں۔احساس ایمرجنسی کیش پروگرام کے سلسلہ میں ملک بھر میں ڈیجیٹل ادائیگی کے 17,000 مراکزقائم کئے جارہے ہیںجوبائیومیٹرک پر مبنی ادائیگیوں کو یقینی بنائیں گے۔ اب تک 7,317 ادائیگی مراکز نے باقاعدہ کام کا آغاز کر دیا ہے جہاں تمام نقد ادائیگیاں نادرا کے توسط سے ہرمستحق فرد کی بائیومیٹرک تصدیق کے بعدکی جا رہی ہے۔ تمام تر احتیاطی تدابیر کو اپناتے ہوئے ادائیگیوں کے دوران کورونا حفاظتی اقدامات کو یقینی بنانے کیلئے صوبائی حکومتوں کے ساتھ مل کر خصوصی انتظامات کئے گئے ہیں۔ وزیر اعظم کی معاون خصوصی برائے سماجی تحفظ و تخفیف غربت ڈاکٹر ثانیہ نشتر نے کہا ہے کہ جمعرات سے احساس ایمرجنسی کیش کی تقسیم کا آغاز کیا گیا، ابتداء میں کچھ مقامات پر ہمیں صارفین کی لمبی قطاروں کی اطلاعات ملیں مگر زیادہ مقامات پر صورت حال بہتر ہے۔ انہوں نے کہا کہ لوگ احساس ایمرجنسی کیش پوائنٹس سے 12,000روپے کی کیش امداد وصول کر رہے ہیں۔ تاہم ملک کے کچھ علاقوں خصوصاً سندھ، جنوبی پنجاب اور خیبر پختونخوا کے مختلف علاقوں سے 40 احساس کیش ریٹیلرز کو گرفتار کیا گیا ہے جو ادائیگوں کے دوران رقم کی ناجائز کٹوتی کر رہے تھے۔ صارفین کی شکایات پر ایکشن لیتے ہوئے 34 ایف آئی آر درج کی گئی ہیں اور بد عنوان ڈیوائس آپریٹرز کو گرفتار کر لیا گیا ہے جو کہ احساس ایمرجنسی کیش کی ادائیگی کے دوران 500 سے 1000 روپے تک کی ناجائز کٹوتی کر رہے تھے۔ ضلعی انتظامیہ، پولیس، فوج اور احساس ضلعی دفاتر مل کر ایسے بدعنوان عناصر کے خلاف سخت سے سخت ترین ایکشن لے رہے ہیں جو اس ضررورت اورمشکلکی گھڑی میں غریب اور مجبور افراد کا استحصال کر رہے ہیں۔ احساس ایمرجنسی کیش کی تقسیم کے متعلق بات کر تے ہوئے وزیر اعظم کی معاون خصوصی برائے سماجی تحفظ و تخفیف غربت ڈاکٹر ثانیہ نشتر نے کہا کہ میں نے تمام احساس ر یجنل افسران کو ایک انتباہی مراسلہ ارسال کر دیا ہے کہ احساس ایمرجنسی کیش آپریشن کے دوران کسی بھی قسم کی کوتاہی یابدعنوانی برداشت نہیں کی جائے گی۔ مستحق افراد کو مکمل 12000 ہزار روپے کی ادائیگی کو یقینی بنایا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ اگر کوئی ڈیوائس آپریٹر آپ سے کٹوتی کامطالبہ کرے تو فور ی طور پر متعلقہ اتھارٹی کو اطلاع دیں۔ عوام اپنے سوالات کے جواب کے لئے ٹول فری ٹیلی فون لائن 26477۔0800 پررابطہ کر سکتے ہیں