- الإعلانات -

سٹیٹ بنک نے کاروباری طبقے کیلئے مراعات کا اعلان کیا ہے، احساس ہنگامی کیش پروگرام کا عمل جاری ہےِِِ ، وزیراعظم عمران خان

وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ سٹیٹ بنک نے کاروباری طبقے کیلئے مراعات کا اعلان کیا ہے، مراعات کا مقصدلاک ڈاؤن اورمتاثرین کی ضروریات پوری کرنے کے درمیان توازن ہے، احساس ہنگامی کیش پروگرام کا عمل جاری ہے، کاروباری طبقے کیلئے ٹیکس میں چھوٹ جیسے مراعاتی پیکج لا رہے ہیں، تعمیرات اور زرعی شعبے بھی کھولے جا رہے ہیں، کاروباری طبقے کیلئے مراعات کے اعلان سے کاروبار کو فروغ ملے گا، سٹیٹ بنک کے اقدامات سے بیروزگاری پر قابو پانے میں مدد ملے گی۔ ہفتے کو سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر ایک ٹویٹ میں انہوں نے کہا کہ لاک ڈائون کے ذریعے عوام کومحفوظ بنانے اور نادار شہریوں کی دیکھ بھال کے کام میں توازن کی حکمت عملی کے تحت سٹیٹ بنک نے آج کاروباری طبقے کیلئے مراعات کا اعلان کیاہے۔احساس پروگرام کے تحت غریب طبقے کو ہنگامی صورتحال میں نقد رقوم کی تقسیم جا رہی ہیں جبکہ کاروباری طبقے کیلئے ٹیکس ری فنڈز کے ساتھ مراعات دی جا رہی ہیں اور تعمیرات اور زراعت کے شعبے کھولے جا رہے ہیں۔ وزیراعظم نے کہا کہ ٹیکس ری فنڈز کے علاوہ تعمیرات کے شعبے کو کھولنے کا فیصلہ کیا گیا ہے، زراعت کا شعبہ پہلے ہی کھولا جا چکا ہے۔ وزیراعظم نے کہا کہ کورونا وائرس سے پیدا ہونے والی صورتحال کے دوران کاروباری طبقے کے لئے سٹیٹ بینک کے اقدامات سے کاروبار کو فروغ دینے اور بڑے پیمانے پر بے روزگاری کو روکنے میں مدد ملے گی۔ وزیراعظم نے گورنر سٹیٹ بینک ڈاکٹر رضا باقر کا ایک ویڈیو کلپ بھی ٹیگ کیا ہے جس میں وہ کورونا وائرس سے پیدا ہونے والی صورتحال کے دوران کاروباری طبقے کے لئے مراعات پر مبنی ری فنانس سکیم کا اعلان کر رہے ہیں تاکہ وہ اپنے کارکنوں کو بے روزگار نہ کریں۔ گورنر سٹیٹ بینک کے مطابق یہ مراعات اس لئے دی جا رہی ہیں تاکہ آئندہ تین ماہ کے دوران محنت کشوں اور ملازمین کو بے روزگاری سے بچایا جا سکے اور چھوٹے اور درمیانے درجے کے کاروبار کی حوصلہ افزائی کی جا سکے۔ اس سکیم کے حوالے سے دیگر تفصیلات درخواست دہندگان کی سہولت کے لئے رابطہ نمبرز کے ساتھ سٹیٹ بینک کی ویب سائٹ پر دستیاب ہے۔ ری فنانس کی رعایت بینکوں کے ذریعے پانچ فیصد مارک اپ پر حاصل کی جا سکتی ہے جبکہ ٹیکس فائلر ہونے کی صورت میں مارک اپ کی شرح 4 فیصد مقرر کی گئی ہے۔ درخواست گزار 20 کروڑ روپے سے 50 کروڑ روپے کے درمیان بینکوں سے قرضے حاصل کر سکتے ہیں