- الإعلانات -

کورونا کا کوئی مذہب یا مسلک نہیں ہے، وہ پوری انسانیت کیلئے ایک بڑاچیلنج بنا ہوا ہے، ہم تمام ایسے افراد جن کے کورونا کے ٹیسٹ پازیٹو ہیں ان سب کو عزت کے ساتھ رکھ رہے ہیں

وزیر مملکت شہریار آفریدی نے کہا ہے کہ کورونا کا کوئی مذہب یا مسلک نہیں ہے، وہ پوری انسانیت کیلئے ایک بڑاچیلنج بنا ہوا ہے، ہم تمام ایسے افراد جن کے کورونا کے ٹیسٹ پازیٹو ہیں ان سب کو عزت کے ساتھ رکھ رہے ہیں۔بدھ کو میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ انہوں نے تبلیغی جماعت رائیونڈ کی شوریٰ کے ساتھ کورونا کے حوالہ سے بات کی ہے، یہ صرف تبلیغی جماعت نہیں بلکہ پورے پاکستان کی بات ہے،انہوں نے کہا کہ ہم تمام مذہبی زائرین کے مسائل کی بات ہے،وزیرمملکت نے کہا کہ بیرون ملک قید 660 کے قریب قیدی جلد پاکستان آ جائیں گے، سپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر کی سربراہی میں جو کمیٹی بنائی گئی ہے اس کے کنوینئر کے طور پر آج بات کرنے آیا ہوں۔ انہوں نے کہا کہ ڈاکٹر ندیم تبلیغی جماعت کی شوریٰ کے ممبر ہیں، ہمارے غیر ملکی مہمانوں کی سکریننگ ہوئی ہے اور بہت سے لوگوں کے کورونا ٹیسٹ منفی آئے ہیں ان لوگوں کو ان کے گھروں کو روانہ کر دیا ہے۔ وزیر مملکت نے کہا کہ افغانستان سے تعلق رکھنے والے 237 تبلیغی جماعت کے افراد اپنے گھروں کو روانہ ہو چکے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم نے کورونا کے سے پیدا ہونے والی صورتحال کو مد نظر رکھتے ہوئے ضرورت مند افراد کی مدد کیلئے 1200 ارب روپے مختص کئے ہیں۔ شہریار خان نے کہا کہ ہزاروں کی تعداد میں زائرین اور تبلیغی جماعت کے افراد اپنے گھروں میں چلے گئے ہیں، 2200 افراد تبلیغ سے وابستہ اس وقت دنیا کے 35 ممالک میں ہیں ان کو وطن واپس لانے کیلئے اقدامات کر رہے ہیں