- الإعلانات -

متحدہ عرب امارات میں موجود پاکستانیوں کی مشکلات کا اندازہ ہے اس لئے وہاں کے پاکستانی سفارتخانے لوگوں کو راشن پہنچانے کیلئے متحرک ہیں،سیّد ذوالفقار بخاری

وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے سمندر پار پاکستانیز سیّد ذوالفقار بخاری نے متحدہ عرب امارات میں پھنسے پاکستانیوں کے نام اپنے ویڈیو پیغام میں اپیل کی ہے کہ جن لوگوں کے پاس وہاں گھر ہیں وہ فی الحال وہیں رکیں، پاکستان کی صلاحیت ایک ہفتہ میں 2 ہزار افراد کو لانے کی ہے اس لئے جو لوگ ٹرانزٹ فلائٹس، ویزا زائد المیعاد یا نوکریوں کے ختم ہو جانے کی وجہ سے پریشان ہیں انہیں ترجیحی بنیادوں پر واپس لا رہے ہیں۔ زلفی بخاری نے کہا کہ مجھے متحدہ عرب امارات میں موجود پاکستانیوں کی مشکلات کا اندازہ ہے اس لئے وہاں کے پاکستانی سفارتخانے لوگوں کو راشن پہنچانے کیلئے متحرک ہیں، دبئی میں کرفیو کی وجہ سے مشکلات ہیں جبکہ ابوظہبی میں حالات قدرے بہتر ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کے پاس اس وقت اتنے وسائل نہیں کہ سب کو ایک ساتھ واپس لایا جائے، متحدہ عرب امارات سے ایک فلائیٹ 18 اپریل کو آئے گی۔ 18 اپریل کے بعد فلائٹس کا شیڈول دوبارہ جاری کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ کسی بھی طرح کی مشکلات کی صورت میں وزارت اوورسیز کو شکایات درج کرائی جا سکتی ہیں