- الإعلانات -

قومی احتساب بیورو کے چیئرمین جسٹس جاوید اقبال کا نیب لاہور بیورو کا دورہ‘

 قومی احتساب بیورو (نیب) کے چیئرمین جسٹس جاوید اقبال نے جمعرات کو نیب لاہور بیورو کا دورہ کیا جہاں ڈائریکٹر جنرل نیب لاہور کی سربراہی میں انہیں میگا کرپشن کیسز بالخصوص منی لانڈرنگ کے مقدمات و دیگر ہائی پروفائل کیسز پر کمبائنڈ انویسٹی گیشن ٹیموںکی جانب سے تحقیقات کے دوران ہونے والی پیشرفت پر جامع بریفنگ دی گئی۔ بریفنگ میں ڈپٹی پراسیکیوٹر جنرل اکاﺅنٹیبلٹی کے علاوہ نیب لاہور کے دیگر سینئر افسران نے بھی شرکت کی۔ چیئرمین نیب نے بریفنگ میں شامل کیسز میں ہونے والی پیشرفت کو توجہ سے سنا اور انویسٹی گیشن ٹیموں کی رہنمائی میں ہدایات جاری کیں۔ چیئرمین نیب نے اپنے دورہ کے دوران نیب لاہور کے پراسیکیوشن ونگ کی کارکردگی کا بغور جائزہ لیا اور ونگ کے افسران کو محنت جاری رکھنے کی تلقین کی تاکہ بدعنوانی کے مقدمات میں دائر ریفرنسز کی آئین و قانون کی روشنی میں پیروی کی جا سکے جبکہ معزز عدالتوں میں زیرِ سماعت مقدمات کو احسن طریقے سے منطقی انجام تک پہنچایا جا سکے۔ انہوں نے کہا کہ نیب کا معزز عدالتوں میں ملزمان کو سزائیں دلوانے کا تناسب70 فیصد سے زائد ہے جو نیب کی پراسیکیوشن ٹیم کی انتھک محنت و کاوشوں کا شاخسانہ ہے۔ جسٹس جاوید اقبال نے کہا کہ نیب آئین اور قانون کے مطابق اپنے فرائض سرانجام دینے پر یقین رکھتا ہے۔ نیب ملک سے بدعنوانی کے خاتمہ کیلئے کام کرنے والا سب سے بڑا اور معتبر ادارہ ہے جبکہ بدعنوان عناصر کے خلاف صرف اور صرف میرٹ کی بنیاد پر اور ٹھوس شواہد کے حصول کے بعد ہی اقدامات اٹھانے پر یقین رکھتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ نیب کے کرپٹ عناصر کے خلاف اور ملک سے بدعنوانی کے خاتمہ کیلئے اٹھائے گئے اقدامات کے مختلف معتبر قومی اور بین الاقوامی ادارے معترف ہیںجن میں ٹرانسپیرنسی انٹرنیشنل، ورلڈ اکنامک فورم اور پلڈاٹ شامل ہیں۔ چیئرمین نیب جسٹس جاوید اقبال نے نیب لاہور بیورو کے دورہ کے موقع پر ہدایات جاری کیں کہ میگا کرپشن کے تمام مقدمات میں جاری تحقیقات کو جلد از جلد منطقی انجام تک پہنچاتے ہوئے شواہد پر مبنی ریفرنسز معزز احتساب عدالتوں میں دائر کئے جائیں