- الإعلانات -

گور نر پنجاب چوہدری محمدسرور نے پنجاب ڈویلپمنٹ نیٹ ورک کے ”راشن مینجمنٹ سسٹم “کا افتتاح کرد یا

گور نر پنجاب چوہدری محمدسرور نے پنجاب ڈویلپمنٹ نیٹ ورک کے ”راشن مینجمنٹ سسٹم “کا افتتاح کرد یا ،16سے زائد فلاحی تنظیمیں کورونا بحران سے متاثر ہونیوالے غر یب خاندانوں کے بارے میں مکمل آگاہی حاصل کر سکیں گی جبکہ گور نر پنجاب چوہدری محمدسرور نے کہا ہے کہ اس سسٹم کے تحت غر یب خاندان ایک وقت میں کسی ایک ہی فلاحی تنظیم سے مدد حاصل کر سکیں گے راشن کی تقسیم کی شفافیت کو بھی100فیصد یقینی بنایا جاسکے گا ۔کورونا بحران کی وجہ سے پاکستان کی معیشت بھی شدید متاثر ہو رہی ہے ۔ عوام سے اپیل کرتے ہیں وہ ماسک لگائیں اور سماجی فاصلہ برقرار رکھیں کیوں کہ حفاظتی اقدامات سے وائرس روکنے میں مدد ملے گی۔ تفصیلات کے مطابق جمعہ کو گور نر ہاﺅس لاہور میںفلاحی تنظیموں کے قائم پنجاب ڈویلپمنٹ نیٹ ورک کے ”راشن مینجمنٹ سسٹم “کی افتتاحی تقریب منعقد کی گئی جبکہ اس موقع پر گور نر پنجاب چوہدری محمدسرور ،وائس چیئر پرسن سرور فاﺅنڈیشن بیگم پروین سرور ،اخوات کے چیئر مین ڈاکٹر امجد ثاقب سمیت دیگر بھی موجود تھے جبکہ اس موقع پررابعہ ضیا نے افتتاحی تقریب کے شر کا کو ”راشن مینجمنٹ سسٹم “ کے حوالے سے تفصیلی بریفنگ دی۔ اس موقع پرتقر یب سے خطاب اور میڈیا سے گفتگو کے دوران گور نر پنجاب چوہدری محمدسرور نے کہا کہ بدقسمتی سے کورونا وائر س ابھی ختم نہیں ہورہا اور ہم سب کی ذمہ داری ہے کہ ان حالات میں غر یب خاندانوں کا سہار ابنیں اور رمضان المبارک کے مقدس مہینے میں ان خاندانوں کو مکمل طور پر شفاف طر یقے سے راشن انکے گھروں کی دہلیز تک پہنچائیں اس لیے ہم آج سے ”راشن مینجمنٹ سسٹم “کا آغاز کر رہے ہیں اس سسٹم کے تحت ہم ایسے تمام غر یب خاندانوں کا ریکارڈ چیک کر سکیں گے جو کسی بھی فلاحی تنظیم سے مدد لے چکے ہیں یا کوئی فلاحی تنظیم آنیوالے دنوں میں ان خاندانوں کو راشن دے گی اس لیے اب اس بات کو یقینی بنایا جاسکے گا کہ کوئی بھی خاندان ایک ماہ میں صرف ایک ہی فلاحی ادارے سے راشن حاصل کر سکے گا۔ گورنر پنجاب نے کہا کہ ماضی میں بھی پاکستانی قوم آزامائشوں سے گزری ہے ہم نے دہشت گردی اورفرقہ واریت کو شکست دی اور اب کورونا کو بھی شکست دیں گے۔ اُنہوں نے کہا کہ حکومت کورونا بحران کے دوران غریب عوام کا خیال رکھ رہی ہے اور احساس پروگرام کے تحت ایک کروڑ20لاکھ افراد کو امدادی رقم فراہم کی جائے گی بہتر حکمت عملی سے کورونا کے پھیلاﺅ کوکم کرنے میں مدد ملی۔ درخواست ہے کہ مخیر حضرات خیرات کا سلسلہ جاری رکھیں تاکہ پاکستان میں کورونا بحران سے متاثر ہونیوالاکوئی بھی خاندان بھوکا نہ رہے